1. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  2. ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ

    تحفظ ناموس رسالتﷺ و ختم نبوت پر دنیا کی مایہ ناز کتب پرٹائپنگ ، سکینگ ، پیسٹنگ کا کام جاری ہے۔آپ بھی اس علمی کام میں حصہ لیں

    ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ
  3. ہمارا وٹس ایپ نمبر whatsapp no +923247448814
  4. [IMG]
  5. ختم نبوت فورم کا اولین مقصد امہ مسلم میں قادیانیت کے بارے بیداری شعور کرنا ہے ۔ اسی مقصد کے حصول کے لیے فورم پر علمی و تحقیقی پراجیکٹس پر کام جاری ہے جس میں ہمیں آپ کے علمی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ آئیے آپ بھی علمی خدمت میں اپنا حصہ ڈالیں ۔ قادیانی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد قادیانی کتب پراجیکٹ مرزا غلام قادیانی کی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ تمام پراجیکٹس پر کام کرنے کی ٹرینگ یہاں سے لیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ کا طریق کار

(اسرائیل میں احمدیہ جماعت ہے؟)

محمدابوبکرصدیق نے '1974ء قومی اسمبلی کی مکمل کاروائی' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ دسمبر 9, 2014

  1. ‏ دسمبر 9, 2014 #1
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (اسرائیل میں احمدیہ جماعت ہے؟)
    جناب یحییٰ بختیار: ’’احمدیہ جماعت ہے‘‘ کیونکہ آپ کہتے ہیں ناں کہ "Our foreign mission" اس میں آپ ان کا ذکر کردیں…
    مرزا ناصر احمد: ہاں، وہ اس واسطے میں نے ’’مشن‘‘ کا ترجمہ کیا ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: ٹھیک ہے۔
    Mirza Nasie Ahmad: This is from the concise Oxford Dicitionary: The field of missionary activity".
    (مرزا ناصر احمد: یہ آکسفورڈ کنسائز ڈکشنری سے ہے۔ جماعت کی کارگزاریوں کی جگہ…)
    جناب یحییٰ بختیار: تو آپ، آپ کی کتاب میں جو ’’فارن مشن‘‘ ہیں، اس کے Page 79 میں آپ یہ بھی نوٹ کرلیجئے کہ جو میں پڑھتا ہوں یہ مضمون وہاں ہے یا نہیں؟ میں سارا نہیں پڑھوں گا۔ جہاں تک:
    1009"Ahmadiyya Mission in Israel" because I said: "The mission in Israel because you said this…"
    مرزا ناصر احمد: ہاں، ہاں، ہاں، جماعت احمدیہ ہے وہاں۔
    Mr. Yahya Bakhtiar: Ahmadiyya Mission in Israel is situated in Haifa at Mount Karmal we have a mosque there, a Mission House, a library, a Book Depot, a School. The Mission also brings out a Monthly entitled All-Bushra, which is sent out to thirteen different countries accessable through the medium of Arabic many works of prophet Messiah have been translated into Arabic through this Mission". پھر اس میں آگے کہتے ہیں:
    Some time ago, our missionary had an interview with the mayor of Haifa, when, during the discussion on many points he offered to build us a school at Kababeer a village neae Haifa, where we have a strong and well established Ahmadiyy Community of Palestinian Arabs. He also promised that he would come to see our Mission at Ka babeer, which he did later, accompanied by our notables from Haifa, He was duly received by the members of the community and by the students of our. Before his return, he entered his impressions in the Visitors' Book.
    Another small incident, which would give readers some idea of the position the Mission in Israel occupies, is that in 1956 when our missionary, Chaudhry Mohammad /sharif, Returned to Headquarters…
    (جناب یحییٰ بختیار: یہ میں نہیں کہتا بلکہ آپ کہتے ہیں کہ آپ کا اسرائیل میں مشن ہے۔ جو کہ مونٹ کارمل حیفہ میں واقع ہے۔ وہاں آپ کی ایک مسجد ایک مشن خانہ ایک لائبریری، کتب خانہ اور ایک سکول ہے۔ مشن ایک ماہنامہ بنام ’’البشریٰ‘‘ شائع کرتا ہے۔ جو کہ عربی زبان میں تیرہ ممالک کو بھجوایا جاتا ہے۔ اسی مشن نے احمدیہ جماعت کی بہت سی کتابوں کے عربی تراجم کئے ہیں۔ کچھ عرصہ ہوا ہمارے مشن کے سربراہ کی حیفہ کے میئر سے ملاقات ہوئی تھی۔ جس کے دوران میئر نے ہمارے لئے کبابیر میں ایک سکول تعمیر کرنے کی پیشکش کی۔ کبابیر میں فلسطینی عربوں پر مشتمل احمدیہ جماعت کی ایک مضبوط تنظیم موجود ہے۔ میئر نے یہ بھی وعدہ کیا کہ وہ کبابیر میں ہمارا مشن دیکھنے آئے گا اور اس نے یہ وعدہ بعد میں پورا کیا۔ اس موقع پر حیفہ میں احمدی معززین میئر کے ہمراہ تھے۔ احمدیہ جماعت کے افراد اور سکول کے طلباء نے میئر کا استقبال کیا۔ میئر کے لئے ایک استقبالیہ دیا گیا۔ واپس جاتے ہوئے میئر نے وزیٹر بک میں اپنے تأثرات تحریر کئے ایک اور چھوٹی سی مثال جس سے پڑھنے والوں کو ہمارے اسرائیلی مشن کی اہمیت کا اندازہ ہوگا۔ ۱۹۵۶ء میں جب ہمارے مشن کے سربراہ چوہدری محمد شریف واپس آئے…)
    مرزا ناصر احمد: یہ سن کون سا ہے؟
    جناب یحییٰ بختیار: یہ پبلی کیشن ہے ۱۹۶۵ء کی۔
    مرزا ناصر احمد: نہیں، نہیں، نہیں۔ یہ آپ نے جو ابھی پڑھا۔
    1010Mr. Yahya Bahhtiar: 1956.
    Mirza Nasir Ahmad: 1956.
    Mr. Yahya Bakhtiar: "That, in 1956 when our missionary, Chaudhry Mohammad Sharif returned to the Headquarters of the movement in Pakistan, the President of Israel sent word that he (our missionary) should see him before embarking on the journey back. Ch. Mohammad Sharif utilized the opportunity to present a copy of the German translation of Holy Quran to the President, which he gladly accepted. This interview and what transpired at it was widely reported in the Israel press and a brief account was also broadcast on the Radio".
    ایک تو میں آپ سے simple سوال یہ پوچھتا ہوں کہ جب آپ کے مشنری وہاں جاتے ہیں اور وہاں سے پاکستان آتے ہیں تو کس پاسپورٹ پر جاتے ہیں؟
    مرزا ناصر احمد: غیر ملکی۔
    جناب یحییٰ بختیار: ہیں جی؟
    مرزا ناصر احمد: غیرملکی احمدی وہاں جاتے ہیں، پاکستان …
    Mr. Yahya Bakhtiar: No, Sir, I very carefully read it Chaudhry Mohammad Sharif in a Pakistan:
    "When he returned to the Headquarters of the Movement in Pakistan".
    Mirza Nasir Ahmad: He is not Pakistani.
    (مرزا ناصر احمد: وہ پاکستانی نہیں)
    Mr. Yahya Bakhtiar: He is not a Pakistani?
    (جناب یحییٰ بختیار: وہ پاکستانی نہیں ہے؟)
    مرزا ناصر احمد: ہاں ان کے پاس غیرملکی نیشنلٹی ہے، وہ باہر رہتے ہیں، یہاں بھی آتے ہیں۔
    1011جناب یحییٰ بختیار: پاکستانی نیشنلٹی بھی ہے؟ وہ بھی ہے یا پاکستان کی نہیں ہے ان کے پاس؟
    مرزا ناصر احمد: یہ مجھے علم نہیں ہے۱؎۔
    جناب یحییٰ بختیار: یہ آپ کے علم میں نہیں ہے۔
    مرزا ناصر احمد: لیکن غیرملکی نیشنلٹی ہے، ان کے پاس ہے۔ پاکستان کے معاہدے کے مطابق بعض ملکوں کے ساتھ … Dual Nationality
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، میں تو…
    مرزا ناصر احمد: نہیں، میں، آپ کو اصل… Dual Natinality بعد میں… نہیں آئی۔
    I don't know about him.
    Mr. Yahya Bakhtiar: I just wanted to know, because when he returned, you know.
    (مرزا ناصر احمد: نہیں، وہ تو ہمارے پاس امریکن نیشنل آتے ہیں، سارے آتے ہیں)
    They come to the Headquarters.
    (وہ ہیڈکوارٹر واپس آتے ہیں)
    Mr. Yahya Bakhtiar: I am a lawyer, I use every world in the legal sense. You return home. You did not say: "When he comes here" "home". He returned to Pakistan.
    I wanted to know…
    ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    ۱؎ میرا انصاف پسند قادیانیوں سے سوال ہے، کیا چوہدری شریف پاکستانی نیشنیلٹی کے حامل نہیں؟ کیا مرزاناصر احمد جھوٹ اور سفید جھوٹ کے مرتکب نہیں ہوئے؟ اب بھی مرزاناصر احمد کے جھوٹ بولنے کا آپ اعتراف نہ کریں تو یہ اس بات کی دلیل ہوگی کہ پوری قادیانی جماعت جھوٹ بولنے، جھوٹ پر بنیاد رکھنے، جھوٹ پر تعمیر کرنے، غرض جھوٹ ہی جھوٹ کا گھروندہ ہے۔
    ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    (جناب یحییٰ بختیار: میں ایک وکیل ہوں۔ میں نے ہر لفظ کو قانونی معنوں میں استعمال کیا ہے۔ آپ واپس گھر آئے، آپ نے یہ نہیں کہا۔ جب وہ یہاں واپس گھر آتا ہے وہ پاکستان واپس آیا)
    Mirz Nasir Ahmad: One who writes articles or these reports …
    (مرزا ناصر احمد: یہ کوئی بھی مضمون یا رپورٹ لکھتا ہے…)
    Mr. Yahya Bakhtiar: May be…
    Mirza Nasir Ahmad: … Doesn't use the English words in the legal terms.
    (مرزا ناصر احمد: وہ انگریزی کے الفاظ قانونی اصطلاح میں استعمال نہیں کرتا)
    Mr. Yahya Bakhtiar: Sir, either he could say that "he returned to the Headquarters". or he could have said that: "he came to the Headquarters". But he says: "When he returned". Chaudhry 1012Mohammad Sharif is obviously a Pakistani person. He may have got a Nationality, as you say; that is possible.
    (جناب یحییٰ بختیار: وہ یہ کہہ سکتا ہے کہ وہ ہیڈکوارٹر واپس آیا یا ہیڈکوارٹرواپس آئے، بلکہ وہ کہتا ہے کہ جب وہ واپس آیا۔ چوہدری محمد شریف ایک پاکستانی شخص ہے اس کے پاس کوئی اور شہریت بھی ہوگی، جیسا کہ آپ کہتے ہیں، یہ ممکن ہے)
    مرزا ناصر احمد: ہمارے پاس جو اس علاقہ کے، ہندوستان کے رہنے والے، ہزاروں غیرملکوں میں آباد ہیں …
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں جی، وہ ہوسکتا ہے…
    مرزا ناصر احمد: … یہ غیر ملکی نیشنل کی حیثیت سے وہاں جاتے ہیں۔
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں، تو ٹھیک ہے انہوں نے برٹش نیشنیلٹی ہوسکتی ہے، کسی اور کی ہوسکتی ہے۔ یہ تو میں نہیں کہہ رہا مگر میں یہ پوچھتا ہوں کہ کس نیشنیلٹی کے پاسپورٹ پر گئے ہیں یہ؟ آپ نے کہا کہ غیرملکی ہے۔
    مرزا ناصر احمد: ہاں، ہاں، غیرملکی۔ پاکستان کا تو وہ جا ہی نہیں سکتا کوئی۔
    جناب یحییٰ بختیار: آپ کی تو نیشنیلٹی پاکستانی ہے ناں جی؟
    مرزا ناصر احمد: الحمدللہ۔

اس صفحے کی تشہیر