1. Photo of Milford Sound in New Zealand
  2. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  3. Photo of Milford Sound in New Zealand
  4. Photo of Milford Sound in New Zealand

امت مسلمہ اور عالمی امن۔مریم ثمر کے کالم کا تنقیدی جائزہ

مبشر شاہ نے 'متفرق خبریں' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ جولائی 10, 2014

  1. ‏ جولائی 11, 2014 #11
    مبشر شاہ

    مبشر شاہ رکن عملہ منتظم اعلی

    مریم ثمر سے ہوا ایک دلچسپ مکالمہ حاضر ہے
  2. ‏ جولائی 12, 2014 #12
    محمد دانش

    محمد دانش رکن ختم نبوت فورم

    ان دھوکے بازوں کی باتوں میں نہ آئیے گا۔ مرزائی جب بھی عام مسلمانوں سے مخاطب ہوتے ہیں تو ان کے واعظ کا ملحض یہ ہوتا ہے کہ اسلام چاروں طرف سے گھرا ہوا ہے۔ مسلمانوں پر تنزل و ادبار کا دور دورہ ہے۔ ان حالات میں جو لوگ باہمی تکفیر بازی کا مشغلہ اختیار کرتے ہیں دراصل وہی اسلام کے جانی دشمن ہیں۔ سو آج وقت یہ ہے کہ آپس کے اختلاف کو بالائے طاق رکھتے ہوے “آپس” میں کوئی جھگڑا نہ کیا جاے۔ ہر شخص جو لا الہ الا اللہ محمد رسول اللہ کا قائل ہے خواہ وہ کسی بھی فرقے سے تعلق رکھتا ہو ایک دوسرے سے متحد ہو جاے اور غیروں کے مقابلے میں سینہ سپر ہو جاے اور اس “تنگ” کو دور کیا جاے۔ اس قسم کی تقریر کر کے مرزائی عوام پر یہ اثر ڈالتے ہیں کے یہ اسلام اورمسلمانوں سے پوری پوری ہمدردی رکھتے ہیں اور ان کو امت مسلمہ کی تکالیف کا اس قدر احساس ہے کہ شاید ان کی راتوں کی نیند بھی حرام ہو چکی ہے۔ اور اس کا مقصد کیا ہوتا ہے؟ نا واقف مسلمانوں کو علماء اسلام اور اسلام سے متنفر کیا جاے اور ان کے ذہنوں میں ایک خیال کو پروان چڑھایا جائے کے سب فساد کے بانی ہی “مولوی” ہیں، جن کا مشغلہ تکفیر بازی ہے۔ اور جب لوگ علماء کے مواعظ حسنہ سے مستفید ہی نا ہو پاے گے تو قادیانیت کے پرچار کی راہیں ہموار ہو جاے گی۔

    یہ بات درست اور مسلِم ہے کہ مسلم امت کو باہم اتحاد کی ضرورت ہے، ہم اس بات کے مخالف نہیں مگر یہ بات کون کر رہا ہے؟ آئیں زرا ان کے عقائد بھی تو دیکھ لیں؟ وہ مسلمانوں کے کتنے ہمدرد ہیں؟اس کے لیے میں صرف چند حوالے لکھ رہا ہوں۔
    کیا مرزا قادیانی نے یہ نہیں لکھا؟“تمہیں دوسرے فرقوں سے جو دعوی اسلام کرتے ہیں بکلی ترک کرنا پڑھے گا”(رخ۱۷ص۴۱۷) مریم ثمر صاحبہ آپ کون سے مسلمانوں کی ہمدرد بن بیٹھی جن کے متعلق آپ کا نبی مکمل بائیکاٹ کا کہہ رہا ہے؟ ذرا آگے چلیں!

    “ساری دنیا ہماری دشمن ہے بعض لوگ(مسلمان) جب ان کو ہم سے مطلب ہوتا ہے تو ہمیں شاباش کہتے ہیں جس سے بعض احمدی یہ خیال کر لیتے ہیں کہ وہ ہمارے دوست ہیں حالانکہ جب تک ایک شخص خواہ وہہم سےکتنہ ہمدردی کرنے والا ہو پورے طور پر احمدی نہیں ہو جاتا وہ ہمارا دشمن ہے(تقریرخلیفہ قادیان مندرجہ الفضل ۲۵ اپریل ۱۹۳۰)مریم ثمر صاحبہ اپنے خلیفہ کی بھی سن لیں! اور

    “غیر احمدی تو حضرت مسیح علیہ السلام(مرزا) کے منکر ہیں اس لیے انکا جنازہ نہیں پڑھنا چاہیے لیکن اگر کسی غیر احمدی(مسلمان) کا چھوٹا بچہ مر جائے تو اس کا جنازہ کیوں نہ پڑھا جاے وہ تو مسیح علیہ السلام(ملعون مرزا) کا مکفر نہیں؟ میں یہ سوال کرنے والے سے پوچھتا ہو اگر یہ درست ہے تو پھر ہندوؤں اور عیسائیوں کے بچوں کا جنازہ کیوں نہیں پڑھا جاتا؟”(انوار خلافت ص۹۳)

    مریم ثمر صاحبہ آپ کو تو ایک کالم اور بھی لکھنا چاہئے جس میں آپ ہندوؤں اور عیسائیوں کے مساہل پر افسردہ ہو اور عیسائیوں کو ایک ہونے کی تلقین کی جائے۔ کیوں نہیں؟ آخر غیر احمدی بھی تو ان کی ہی طرح ہیں نہ؟ میں آپ کا اگلا کالم ضرور پڑھنا چاہو گا جس میں آپ ان کے مساہل اور ان کے حل بیان کر رہیں ہو!

    اور وہ مسلمان دوست جو مریم ثمر کے کالم کی حمایت کرتے ہیں ان کی آنکھیں کھولنے کے لیے ایک حوالہ لکھ دیتا ہو جو کہ مرزائیوں کا پول کھولنے کے لیے کافی ہے۔
    “تم اس وقت تک امن میں نہیں ہو سکتے جب تک تمھاری اپنی بادشاہت نہ ہو۔ہمارے لیے امن کی ایک ہی صورت ہے دنیا پر غالب آجائیں”(خطبہ خلیفہ قادیان مندرجہ الفضل۲۵ اپریل ۱۹۳۰)

    ان عقاہد و نظریات کی موجودگی میں کسی مرزائی کو کیا حق کہ وہ اتحاد و اتفاق کا ڈھونگ رچاے؟ ایک مرزائی کو کبھی مسلمانوں سے ہمدردی نہیں ہو سکتی! اس کے عقائد ان کو مجبور کر رہیں کہ وہ مسلمانوں سے دشمنی رکھے! اور آج جو
    LOVE FOR ALL HATRED FOR NONE کا یہ نعرہ یہ لگا رہے ہیں ان کی اس منافقت پر میں انکے لیے انکے بڑوں کا الفاظ نقل کر رہا ہو۔
    “میں نفاق کی صلح ہرگز نہیں پسند نہیں کرتا ۔”(برکات خلافت ۲۷) اور ”صلح اسی وقت ہو سکتی ہے جب کہ یا تو جو لینا ہو لے لیا جائے اور جو دینا ہو دے دیا جائے۔ کیونکہ یہ مخالف کی مخالف سے صلح ہے۔ بھائی بھائی کی صلح نہیں۔ اور یا پھروہ زہر جو پھلایا گیا ہو اس کا ازالہ کر دیا جائے۔”(عرفان الہٰی۸۴)

    آئیں مرزائی اپنے گندے عقائد سے پھلایا گیا زہر صاف کریں اور پھر امت مسلمہ کے اتحاد کی باتیں کریں۔
    آخری تدوین : ‏ جولائی 12, 2014
    • Like Like x 4
  3. ‏ جولائی 12, 2014 #13
    مبشر شاہ

    مبشر شاہ رکن عملہ منتظم اعلی

    واہ واہ کیا عمدہ بول بولا ہے روح جھوم اٹھی ہے جی بہت اچھا تبصرہ کیا ہے اور آپ کی یہ بات سو فیصد درست ہے

  4. ‏ جولائی 12, 2014 #14
    مبشر شاہ

    مبشر شاہ رکن عملہ منتظم اعلی

    بلیک واٹر قادیانیوں کی تیار کردہ اور قادیانیوں کی سرپرستی میں چلنے والی دنیا کی دہشت گرد تنظیم پاکستان میں سرگرم ہے اور ہر دہشت گرد کاروائی کے پیچھے قادیانیوں کا ہاتھ ہے یہ وڈیو دیکھیں
  5. ‏ جولائی 16, 2014 #15
    عزیز

    عزیز رکن ختم نبوت فورم

    جیس کو اسلام کے ساتھ دور دور تک بھی کوئی وستا نہیں اس کو یہ حق حاصل نہیں کہ وہ اسلام پر تبصرہ کرے.
  6. ‏ جولائی 17, 2014 #16
    دین محمد

    دین محمد رکن ختم نبوت فورم

    بہت خوب بہت اچھی گفتگو فرمائی بشک ایک کالم نگار عوام کی آواز ہوتا ہے مگر ضروری ہے کہ وہ خود عوام ہو۔جب کہ مریم ثمر کے کالم سے فتنے کی بو آرہی ہے ۔
    • Like Like x 1

اس صفحے کی تشہیر