1. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  2. [IMG]
  3. ختم نبوت فورم کا اولین مقصد امہ مسلم میں قادیانیت کے بارے بیداری شعور کرنا ہے ۔ اسی مقصد کے حصول کے لیے فورم پر علمی و تحقیقی پراجیکٹس پر کام جاری ہے جس میں ہمیں آپ کے علمی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ آئیے آپ بھی علمی خدمت میں اپنا حصہ ڈالیں ۔ قادیانی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد قادیانی کتب پراجیکٹ مرزا غلام قادیانی کی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ تمام پراجیکٹس پر کام کرنے کی ٹرینگ یہاں سے لیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ کا طریق کار

قادری پاکٹ بک بجواب مرزائی پاکٹ بک

مبشر شاہ نے 'تحفظ ختم نبوت کتب' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ مارچ 7, 2016

لڑی کی کیفیت :
مزید جوابات کے لیے دستیاب نہیں
  1. ‏ مارچ 7, 2016 #1
    مبشر شاہ

    مبشر شاہ رکن عملہ منتظم اعلی

    قادری پاکٹ بک بجواب مرزائی پاکٹ بک

    ہم آپ کے سامنے مرزائیوں کی مشہور کتاب جو تقریبا ہر مرزائی کے پاس ہوتی ہے "پاکٹ بک" کا رد پیش کر رہے ہیں ۔
    ہم اپنی اس کتاب کو غازی ممتاز حسین قادری شہید رحمۃ اللہ علیہ کی نسبت سے منسوب کر رہے ہیں "قادری پاکٹ بک"

    آخری تدوین : ‏ مارچ 8, 2016
    • Like Like x 2
  2. ‏ مارچ 7, 2016 #2
    • Like Like x 2
  3. ‏ مارچ 7, 2016 #3
    مبشر شاہ

    مبشر شاہ رکن عملہ منتظم اعلی

    ان صفحات میں پیش کئے گئے حوالہ جات کے اصل سکین


    انت منی وانا منک.png
    • Like Like x 2
  4. ‏ مارچ 7, 2016 #4
    • Like Like x 2
  5. ‏ مارچ 7, 2016 #5
    • Like Like x 2
  6. ‏ مارچ 8, 2016 #6
    مبشر شاہ

    مبشر شاہ رکن عملہ منتظم اعلی

    انت منی وانا منک

    (مرزا کا خدا مرزے کو کہتا ہے کہ "تو مجھ سے ہے اور میں تجھ سے ہوں")
    مرزا قادیانی کی ایک وحی
    پاکٹ بک کے مصنف نے مرزا قادیانی کی اس وحی پر پردہ ڈالنے اور سچا ثابت کرنے کے لیے دو آیات پیش کی ہیں جس سے یہ دھوکہ دینے کی ناپاک کوشش کی گئی ہے کہ انسان خدا کا شریک ہو سکتا ہے جبکہ ان آیات میں خدا کی شراکت نہیں پائی جا رہی انسان کی شراکت انسان سے پائی جا رہی ہے آیات ملاحظہ فرمائیں :
    پہلی آیت

    فَلَمَّا فَصَلَ طَالُوتُ بِالْجُنُودِ قَالَ إِنَّ اللَّـهَ مُبْتَلِيكُم بِنَهَرٍ فَمَن شَرِبَ مِنْهُ فَلَيْسَ مِنِّي
    ھر جب طالوت لشکروں کو لے کر شہر سے جدا ہوا بولا بیشک اللہ تمہیں ایک نہر سے آزمانے والا ہے تو جو اس کا پانی پئے وہ میرا نہیں۔

    دوسری آیت

    رَبِّ إِنَّهُنَّ أَضْلَلْنَ كَثِيرًا مِّنَ النَّاسِ ۖ فَمَن تَبِعَنِي فَإِنَّهُ مِنِّي ۖ وَمَنْ عَصَانِي فَإِنَّكَ غَفُورٌ رَّحِيمٌ
    اے میرے رب بیشک بتوں نے بہت لوگ بہکائے دیے تو جس نے میرا ساتھ دیا وہ تو میرا ہے اور جس نے میرا کہا نہ مانا تو بیشک تو بخشنے والا مہربان ہے۔

    تشریح

    ان دونوں آیات میں ایک انسان اپنے آپ کو مخصوص اوصاف میں دوسرے انسانوں میں شریک کر رہا ہے جبکہ مرزا غلام قادیانی نے "انت منی وانا منک" کہہ کر اپنی شراکت اللہ تعالیٰ سے ثابت کی ہے جو کہ صریح شرک و کفر ہے ۔
    آخری تدوین : ‏ مارچ 8, 2016
    • Like Like x 1
لڑی کی کیفیت :
مزید جوابات کے لیے دستیاب نہیں

اس صفحے کی تشہیر