1. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  2. ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ

    تحفظ ناموس رسالتﷺ و ختم نبوت پر دنیا کی مایہ ناز کتب پرٹائپنگ ، سکینگ ، پیسٹنگ کا کام جاری ہے۔آپ بھی اس علمی کام میں حصہ لیں

    ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ
  3. ہمارا وٹس ایپ نمبر whatsapp no +923247448814
  4. [IMG]
  5. ختم نبوت فورم کا اولین مقصد امہ مسلم میں قادیانیت کے بارے بیداری شعور کرنا ہے ۔ اسی مقصد کے حصول کے لیے فورم پر علمی و تحقیقی پراجیکٹس پر کام جاری ہے جس میں ہمیں آپ کے علمی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ آئیے آپ بھی علمی خدمت میں اپنا حصہ ڈالیں ۔ قادیانی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد قادیانی کتب پراجیکٹ مرزا غلام قادیانی کی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ تمام پراجیکٹس پر کام کرنے کی ٹرینگ یہاں سے لیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ کا طریق کار

قادیانی کفریات کا ایک مختصر جائزہ (آخری قسط)

مبشر شاہ نے 'متفرق مقالات وتحاریر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ جولائی 8, 2014

  1. ‏ جولائی 8, 2014 #1
    مبشر شاہ

    مبشر شاہ رکن عملہ منتظم اعلی

    [​IMG] غلام احمد قادیانی نے اپنی ایک کتاب میں یہ لکھا کہ مسیح کا تعلق بنی اسرائیل سے نہیں تھا کیونکہ بنی اسرائیل میں سے کوئی اس کا باپ نہیں تھا پھر اس سے بالکل متضاد اور اسی کتاب میں دوسرے مقام پر یہ تحریر کیا کہ حضرت عیسیٰ بنی اسرائیل کے خاتم الانبیاءہیں۔ غلام احمد قادیانی کے یہ متضاد خیالات پڑھ کر اس کی یہ بات تسلیم کرنی پڑتی ہے کہ جھوٹے کے کلام میں تضاد ضرور ہوتا ہے۔ اب یہ جھوٹا کون ہے؟ جس کی تحریروں اور دعوﺅں میں تضاد ہے۔ مرزا قادیانی نے ضمیمہ براہینِ احمدیہ میں لکھا کہ میرا یہ دعویٰ نہیں ہے کہ میں وہ مہدی ہوں جو حضرت فاطمہؓ کی اولاد سے ہے پھر اس سے بالکل متضاد مرزا قادیانی نے یہ دعویٰ کر دیا کہ وحی کے ذریعے اسے معلوم ہوا ہے کہ اس کا تعلق بنی فارس سے ہے اور بنی فارس بھی بنی اسرائیل اور اہل بیت میں سے ہیں۔ یہ بھی شاید پوری انسانی تاریخ کا واحد واقعہ ہے کہ غلام احمد قادیانی نے بار بار اپنی تحریروں میں اپنی قوم مغل برلاس بتائی ہے پھر جھوٹی وحی نے اس کی قوم بھی تبدیل کر دی۔ یہ تو صرف نسل کی تبدیلی کا معاملہ ہے، ایک کتاب میں مرزا قادیانی نے اپنی تبدیلی¿ دعویٰ بھی کیا ہے یعنی اسے کچھ دیر کےلئے مریم بنا دیا گیا۔
    بات مرزا قادیانی کے تضادات کی ہو ر ہی تھی۔ اپنے الہامات کے حوالے سے وہ خود لکھتا ہے کہ مجھے بعض الہامات ایسی زبانوں میں ہوتے ہیں جن سے مجھے کچھ واقفیت نہیں جیسے انگریزی یا سنسکرت یا عبرانی وغیرہ پھر خود ہی وہ اپنی اس بات پر تبصرہ کرتا ہے کہ یہ بالکل غیر معقول اور بے ہودہ امر ہے کہ انسان کی اصل زبان تو کوئی اور ہو اور الہام اسے کسی دوسری زبان میں ہوں۔ مرزا قادیانی کا خود یہ ماننا کہ اسے ایسی زبانوں میں الہام ہوتے ہیں جو زبانیں وہ نہیں سمجھتا پھر دوسری زبانوں میں الہام کو خود ہی ایک غیر معقول اور بے ہودہ عمل کا نام دے رہا ہے۔ حقیقت یہ ہے کہ مرزا قادیانی کے ”الہامات“ تھے ہی بے ہودہ اور غیر معقول۔ اس کی چند مثالیں دے کر میں کالم کو ختم کرنا چاہتا ہوں۔ مرزا کے شیطانی الہامات نے کائنات کے خالق و مالک اور خدائے واحد کو بھی معاف نہیں کیا۔ کبھی کہا کہ اللہ نے مجھے اپنا بیٹا کہہ کر مخاطب کیا ہے، کبھی کہا کہ رب العالمین ایک پلنگ پر بیٹھے ہوئے تھے کہ انہوں نے نہایت شفقت سے مجھے اپنے ساتھ پلنگ پر بٹھا لیا۔ اس وقت میری ایسی حالت ہو گئی جیسے سالہا سال کے بعد کورئی بچھڑا ہوا بیٹا اپنے باپ سے ملتا ہے۔ ”آئینہ کمالات“ میں مرزا قادیانی نے لکھا کہ میں نے خواب میں دیکھا کہ میں خود خدا ہوں اور میں نے یقین کر لیا کہ میں وہی ہوں ایک ”الہام“ میں مرزا قادیانی کو اللہ نے کہا کہ تو میرے نزدیک میری اولاد کی طرح ہے۔ کیا اللہ کی کوئی اولاد بھی ہے؟ ایسی بے ہودہ بات ایک جھوٹا اور کذاب ہی اللہ سے منسوب کر سکتا ہے پھر اللہ کے بارے میں مرزا قادیانی نے یہ یاوہ گوئی بھی کی کہ اللہ ٹھیک بھی کرتا ہے اور غلطی بھی کرتا ہے شاید مرزا کا اشارہ اپنی پیدائش کی طرف ہے کہ اسے پیدا کرنا اللہ کی غلطی ہے۔
    مرزا غلام احمد قادیانی نے وسائل رکھنے کے باوجود خود تو اپنی پوری زندگی میں حج نہیں کیا لیکن بیت اللہ شریف کی توہین ان الفاظ میں کی کہ
    ”خدا نے اپنے الہامات میں میرا نام بیت اللہ بھی رکھا ہے“۔ آگے چل کر لکھا کہ ”ایک آدمی میرے پاﺅں چوم رہا تھا اورمیں کہہ رہا تھا کہ میں حجر اسود ہوں“ دنیا بھر کے مسلمانوں کا ٹھکرایا ہوا شخص اگر خود کو حجر اسود قرار دے تو اس سے بڑھ کر مضحکمہ خیز بات اور کیا ہو سکتی ہے۔
    مرزا قادیانی کے عجیب و غریب الہامات مہمل الہامات، غلط زبان میں الہامات اور جھوٹ اور جہالت پر مبنی الہامات کی فہرست بہت طویل ہے جو پھر کسی کالم میں پیش کی جائے گی۔ فی الوقت اگر کوئی قادیانی اپنی آنکھوں سے کفر و الحاد اور تعصبات کی پٹی اتار کر یہ کالم بھی بغور پڑھ لے تو وہ حق و صداقت اور جھوٹ میں امتیاز کر سکتا ہے اور اسلام کے راستے پر واپس لوٹ سکتا ہے۔

اس صفحے کی تشہیر