1. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  2. ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ

    تحفظ ناموس رسالتﷺ و ختم نبوت پر دنیا کی مایہ ناز کتب پرٹائپنگ ، سکینگ ، پیسٹنگ کا کام جاری ہے۔آپ بھی اس علمی کام میں حصہ لیں

    ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ
  3. ہمارا وٹس ایپ نمبر whatsapp no +923247448814
  4. [IMG]
  5. ختم نبوت فورم کا اولین مقصد امہ مسلم میں قادیانیت کے بارے بیداری شعور کرنا ہے ۔ اسی مقصد کے حصول کے لیے فورم پر علمی و تحقیقی پراجیکٹس پر کام جاری ہے جس میں ہمیں آپ کے علمی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ آئیے آپ بھی علمی خدمت میں اپنا حصہ ڈالیں ۔ قادیانی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد قادیانی کتب پراجیکٹ مرزا غلام قادیانی کی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ تمام پراجیکٹس پر کام کرنے کی ٹرینگ یہاں سے لیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ کا طریق کار

قومی اسمبلی میں پانچواں دن

محمدابوبکرصدیق نے '1974ء قومی اسمبلی کی مکمل کاروائی' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ دسمبر 2, 2014

لڑی کی کیفیت :
مزید جوابات کے لیے دستیاب نہیں
  1. ‏ دسمبر 2, 2014 #11
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (ہزاروں نبی ہوں گے، مرزامحمود!)
    جناب یحییٰ بختیار: میں نے آپ کی جو توجہ دلائی،اسی لئے کہ ایک حوالے میں ’’امکان‘‘ آپ کہہ سکتے ہیں کہ اس کی طرف اشارہ ہے،’’آپa کے بعد نبی آسکتے ہیں اور ضرور آ سکتے ہیں۔‘‘ دوسرے میں جو الفاظ استعمال کئے ہیں اور بڑے…میں یہ نہیں سمجھ سکتا کہ مرزا بشیر الدین محمود احمد صاحب کوئی لفظ بدل دیںگے۔ اگر ان کا مطلب نہ ہو بدلنے کا، Meaning (مطلب) مختلف نہ ہوں،اور یہاں کہتے ہیں:’’میں کہتاہوں ہزاروں نبی ہوںگے۔‘‘
    اورپھر…
    مرزاناصر احمد: اور اگر انہوں نے ہی اس کے کوئی معنی کئے ہوں تو وہ تو ہمیں قبول کر لینے چاہئیں ناں،خود لکھنے والے نے اگر معنی کئے ہوں کہ میری کیا مراد ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: وہ آپ بتلادیجئے۔ پھر Depend (انحصار)کرتا ہے کہ پہلے کون سی بات کہی۔ بعد میں کون سی بات کہی۔
    مرزاناصر احمد: بعد میں یہ بات کہی جو میں سنانے لگاہوں۔ آپ نے…سوال کیا گیا کہ: ’’کیا مرزا غلام احمد صاحب کے روحانی درجہ کا کوئی اورشخص آئندہ آسکتاہے؟‘‘
    جواب:۔ اس کا امکان ہے۔ لیکن یہ نہیں کہا جاسکتا کہ آیااﷲ تعالیٰ آئندہ ایسے شخص مبعوث کرے گایا نہیں۔ ایک شخص کے ایک حوالے،ایک کتاب کے ایک فقرے کو لے کے یہ زور دینا کہ ساری…تعلیم میں چھوڑ کے ان کے متعلق کوئی غلط بات کہہ دوں،یہ تو نہیں میں کروںگا۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، اب دراصل وہ امکانی بات آپ فرمارہے ہیں، میں کہتا ہوں کہ…
    مرزاناصر احمد: جی،آپ نے مجھ سے پوچھا تھا، میں نے کہاکہ میرے نزدیک یہ ایک امکانی بات ہے۔ میں تواپنے نزدیک ہی بتاسکتاہوں اورمیں آپ کو کیا بتاسکتاہوں؟
    685جناب یحییٰ بختیار: اچھا،مرزا صاحب! میں آپ کی توجہ آپ کے ایک بیان کی طرف دلاناچاہتاہوں تاکہ آپ اس کی بھی وضاحت کرسکیں۔ یہ جولاہورمیں کورٹ آف انکوائری بیٹھی ہے،ان کے سامنے آپ کا بیان ہواتھا؟
    مرزاناصر احمد: جی،ہواتھا۔
    جناب یحییٰ بختیار: اس میں آپ سے کچھ سوالات پوچھے گئے اور ان کے جوابات یہاں لکھے گئے ہیں۔ میں وہ Repeat (دوبارہ)کرتاہوں۔ آپ جواب دیں کہ صحیح ہے یا نہیں۔
    مرزاناصر احمد: ہاں، ٹھیک ہے۔
    Mr. Yahya Bakhtiar: Do you believe Mirza Ghulam Ahmad to be a NABI? ---- Question.
    (جناب یحییٰ بختیار: کیا آپ مرزاغلام احمد کو نبی مانتے ہیں؟… سوال)
    Mirza Nasir Ahmad: No my answer.
    (مرزاناصر احمد: میرا جواب، نہیں)
    Mr. Yahya Bakhtiar: No, I am repeating the answer. (جناب یحییٰ بختیار: نہیں میں جواب کو دہراتا ہوں)
    آپ بعد میں پھر اگر کہیں غلط ہے…
    مرزاناصر احمد: جی! ٹھیک ہے۔
    Mirza Nasir Ahmad: You said: "Yes...."
    (مرزاناصر احمد: آپ نے کہا، جی!)
    Mr. Yahya Bakhtiar: No, no, I said: No.
    (جناب یحییٰ بختیار: نہیں، نہیں۔ میں نے کہا نہیں)
    Mirza Nasir Ahmad: "... But I believe him to be an UMMATI NABI."
    (مرزاناصر احمد: لیکن میں اسے (مرزاغلام احمد) کو امتی نبی مانتا ہوں)
    Then the question. (تب سوال ہوتا ہے)
    How are you related to him?
    (آپ کا اس (مرزاغلام احمد) سے کیا رشتہ ہے؟)
    Answer: I am his grandson, son's son.
    (جواب: میں اس کا پوتا ہوں،بیٹے کا بیٹا)
    جج نے لکھا ہے یا Explain (واضح) کیا گیا ہے۔
  2. ‏ دسمبر 2, 2014 #12
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (مرزاقادیانی! امت محمدیہ میں پہلا امتی نبی ہے)
    Question: 686Was he the first UMMATI NABI after Hazrat Mohammad (Peace be upon him)?
    (سوال: کیا وہ حضرت محمدa کے بعد پہلا امتی نبی ہے؟ )
    Answer: "To my belief, he was the first UMMATI NABI in Ummat -e- Mohammadih."
    (جواب: میرے اعتقاد کے مطابق وہ امت محمدیہ میں پہلا امتی نبی تھا)
    یہ آپ نے کہا:
    مرزاناصر احمد: جی کہا۔
    Mr. Yahya Bakhtiar: Can any more such Nabi follow? Question.
    (جناب یحییٰ بختیار: کیا اس طرح کے اور نبی بھی آسکتے ہیں؟ سوال)
  3. ‏ دسمبر 2, 2014 #13
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (مرزاقادیانی کے بعد اور آسکتے، مگر شاید نہ آئیں،مرزاناصر)
    Answer: They can but they may not.
    (جواب: آسکتے ہیں مگر شاید نہ آئیں) یہ میں آپ کو بتا رہا ہوں۔
    مرزاناصر احمد: ہاں، ہاں! ٹھیک ہے۔
    Mr. Yahya Bakhtiar: It is properly reported?
    (جناب یحییٰ بختیار: یہ بالکل صحیح لکھا گیا ہے؟)
    Mirza Nasir Ahmad: It is properly reported.
    (مرزاناصر احمد: یہ بالکل صحیح لکھا گیا ہے)
    Mr. Yahya Bakhtiar: "Why not?" --- This is the question and your answer to that is: "Because, according to my faith, the Holy Mohammad of Islam did not predict. The coming of more than one UMMATI NABI, or any other UMMATI NABI theoretically there can be more than one UMMATI NABI in UMMAT of Holy Prophet of Islam. But, because of his prophecy, I believe that there will not by any more." Is it correctly recorded?
    (جناب یحییٰ بختیار: سوال یہ ہے کہ کیوں نہیں؟ اور آپ کا جواب یہ ہے کہ ’’چونکہ میرے اعتقاد کے مطابق حضرت محمدﷺ نے ایک سے زائد امتی نبی آنے کی پیش گوئی نہیں فرمائی یا کسی دوسرے امتی نبی کی پیش گوئی نہیں فرمائی۔ اس لئے میرا ایمان ہے کہ کوئی اور (امتی نبی) نہیں آئے گا۔ یہ صحیح طرح ریکارڈ ہے؟)
    مرزاناصر احمد: جی! یہ تو میں اب بھی یہی…
    جناب یحییٰ بختیار: کیونکہ ہم تو وہاں نہیں تھے نا۔
    مرزاناصر احمد: ہاں! ٹھیک ہے، ٹھیک ہے۔
    687Mr. Yahya Bakhtiar: So, Mirza Sahib, then you are asked: "Can you cite the 'basharat' (بشارت) or prophesy, because you have referred to that?"
    And then you say: "I cannot give the reference of the relevent tradition (Hadith) of the Holy Prophet right now, but I will send it to the Tribunal later. One can find support for this belief even from the Qur'an. According to our faith, Mirza Ghulam Ahmad was also the promised Mashiah and promised Mehdi."
    Now, Sir, I have read their statement, and you said: "This is correctly recorded."
    (جناب یحییٰ بختیار: تو مرزاصاحب تب آپ بتاسکتے ہیں۔ کیا آپ اس پیش گوئی یا بشارت کا حوالہ دے سکتے ہیں جس کا آپ نے ذکر کیا ہے۔ پھر آپ نے کہا ہے کہ آپ اس/ وقت متعلقہ حدیث کا حوالہ دینے سے قاصر ہیں۔ تاہم بعد میں یہ حوالہ دے دیں گے۔ (آپ کے بیان کے مطابق) یہ عقیدہ قرآن میں بھی موجود ہے۔ ہمارے (یعنی مرزائیوں کے) عقیدے مطابق آپ کا (یعنی مسلمانوں کا) مہدی بھی مہدی موعود ہے۔ تو جناب (مرزاصاحب) میں نے آپ کا بیان پڑھ کر سنایا ہے اور آپ یہ مانتے ہیں کہ یہ درست لکھا گیا ہے)
    مرزاناصر احمد: جی ہاں! Yes.
    Mr. Yahya Bakhtiar: Sir, here you say first that he was Ummati Nabi; you say, Sir, that he was the only Ummati Nabi; you say, Sir, that according to your faith, no other Ummati Nabi can come because of the prophecy of the Holy Prophet of Islam; And you say: "According to our faith, he was also---- I want to emphasise the word 'also'---- the promised Mashiah and the promised Mehdi."
    So, there are two capacities which Mirza Ghulam Ahmad, according to you, had: One as an Ummati Nabi; the other as promised Mashiah and Mehdi: I was confirming myself yerterday, and again I respectfully repeat the question that: "Can there be another Ummati Prophet after him according to your faith?" You said: "No." So, does it not amount to sayng that he is the last of the Prophets?
    (جناب یحییٰ بختیار: تو جناب! آپ یہاں کہتے کہ وہ امتی نبی تھا۔ آپ یہ بھی کہتے ہیں کہ وہی صرف امتی نبی تھا اور آپ کے عقیدے کے مطابق کوئی اور امتی، نبی نہیں آسکتا۔ کیونکہ حضرت محمدa نے صرف ایک امتی نبی کی پیش گوئی فرمائی تھی اور آپ یہ بھی کہتے ہیں کہ آپ کے عقیدے کے مطابق وہ (مرزاغلام احمد) مہدی موعود بھی تھا۔ میں لفظ ’’مسیح موعود‘‘ بھی پر زور دینا چاہتا ہوں۔ اس طرح مرزاغلام احمد دو حیثیتوں کا مالک تھا۔ یعنی ایک امتی نبی کی حیثیت اور دوسرے مسیح موعود کی حیثیت۔ کل بھی میں نے اپنے (سوال کو) محدود رکھا تھا اور نہایت احترام کے ساتھ آج بھی میں اپنے سوال کو دہراتا ہوں۔ کیا کوئی اور بھی امتی نبی ہوسکتا ہے اور اگر نہیں ہوسکتا تو کیا اس کا یہ مطلب نہیں کہ وہ (یعنی مرزاغلام احمد) آخری نبی ہے؟)
    Mirza Nasir Ahmad: He is not.
    (مرزاناصر احمد: وہ (مرزاغلام احمد) آخری نبی نہیں)
    Mr. Yahya Bakhtiar: Why not? if this your....
    (جناب یحییٰ بختیار: کیوں نہیں؟)
    Mirza Nasir Ahmad: Because Mohammad Salallah- ho- Alah- e- wa- Sallam is last of the Prophets in every sense of word. "Khatam- un- Nabbiyen (خاتم النّبیین)."
    (مرزاناصر احمد: وہ اس لئے کہ حضرت محمد مصطفیٰa حقیقتاً آخری نبی ہیں۔ سبھی ان کو آخری نبی مانتے ہیں)
    688Mr. Yahya Bakhtiar: Then what is your controversy with others who say that he is the last of the Prophets? Only on the question of Mehdi? Or you say that other Ummati Nabi can come?
    مرزاناصر احمد: میں نے ابھی عرض کی کہ امت محمدیہ شروع سے لے کر تیرہ سو سال تک حضرت نبی اکرمa کو خاتم النّبیین مانتے ہوئے ایک ایسے مسیح کا انتظار کرتی رہی جسے مسلم کی حدیث میں خود آنحضرتa نے چار بارنبی اﷲ کہا اور وہ ’’خاتم النّبیین‘‘ پر بھی ایمان لاتے تھے۔ اس واسطے میرے نزدیک تو کوئی اس میں الجھن نہیں ہے۔ ساری امت تیرہ سو سال تک ’’خاتم النّبیین‘‘ کے خلاف اس عقیدہ کو نہیں سمجھتی رہی کہ ایک مسیح آئے گا جو نبی اﷲ ہوگا اور میں نے ابھی بتایا ہے کہ امت کے سلف صالحین کی سینکڑوں عبارتیں یہاں بتائی جاسکتی ہیں جوآنے والے کے مقام کوظاہرکررہی ہیں۔ ایک شیعہ حضرات،ہمارے بھائی جو ہیں۔ ان کا حوالہ میں نے کل پڑھا۔ ان کا ایک اورحوالہ ہے کہ وہ:’’ تمام انبیاء سے مہدی افضل ہوگا کیونکہ نبی اکرمؐ کاظل کامل ہے۔‘‘
    اسی طرح سینکڑوں حوالے ہیں۔ اگر آپ کو ضرورت ہو تومیں آٹھ دس دن میں وہ سینکڑوں حوالے آپ کو دکھا سکتاہوں۔ امت محمدیہ…یعنی اس وقت جو میں نے Clarification (وضاحت) کے لئے بات کی جو میرے ذہن میں پہلے تھی…کہ تیرہ سو سال تک امت محمدیہ ایک نبی کا انتظار بھی کرتی رہی اورتمام سلف صالحین اس بات پر متفق تھے کہ اس نبی کا انتظار ختم نبوت کو توڑنے والا نہیں ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: مرزاصاحب!آپ معاف کریںگے۔ اگر پھرمیں اپنا وہ دہراؤں کہ آپ کے بیان کے مطابق مرزا غلام احمد صاحب مسیح موعود ہیں اورآپ کے بیان کے مطابق امتی نبی ہیں اورآپ نے کہا ہے کہ :
    "According to my belief, he is also Mashieh-e- Mauood or the promised Mashih, and Mehdi also, and he is Ummati..."
    There are two capacities, and I want clarification on that point. And I would respectfully, again, before you give the answer, draw your attention to your document which you have filed in support of your contention. This is Annexture 6, which is a book written by Maulana abul Ata, from which I read yesterday and... I am sorry 689here to repeat... which is written in reply to Maulana Maudoodi's book 'Khatma-e- Nabuwwat (ختم نبوت)'. This deals with that....
    (’’میرے اعتقاد کے مطابق وہ موعود نبی بھی ہے اور امتی نبی بھی۔‘‘ یہ دو حیثیتیں ہیں۔ جن کی میں وضاحت چاہتا ہوں اور میں پورے احترام کے ساتھ آپ کی توجہ اس دستاویز کی جانب دلوانا چاہتا ہوں۔ جو آپ نے اپنے موقف کے بارے میں پیش کی ہے۔ یہ دستاویز نمبر چھ ہے۔ جو ایک کتاب ہے جسے مولانا ابوالعطاء نے مولانا مودودی کی کتاب ’’ختم نبوت‘‘ کے جواب میں لکھا ہے)
    مرزاناصر احمد: اس کا صفحہ کیاہے؟
    جناب یحییٰ بختیار: صفحہ جی آٹھ۔ یہا ںجی، یہ مولانا ابوالعطاء صاحب فرماتے ہیں…
    مرزاناصر احمد: جی، یہ تو وہی جو کل والاہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں وہی میں کہہ رہاہوں کہ I am sorry I have to repeat. (میں اس کے دہرانے پر معذرت خواہ ہوں۔)
    مرزاناصر احمد: ہاں ،ٹھیک ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: ’’خاتمیت محمدیہ آنحضرتa کو خاتم النّبیین ماننے والوں کے مختلف دو نظریے ہیں…‘‘
    Now, Sir, we are not discussing the Mashiah or the promised Mehdi. This is the interpretation…Tafseer.
    ( توجناب ہم مسیح کو بحیثیت مسیح موعود زیر بحث …نہیں لارہے بلکہ یہ تو مفہوم کی بات ہورہی ہے)
    ’’…کہ خاتم النّبیین ماننے والوں کے دو مختلف نظریے ہیں‘‘ کہ خاتم النّبیین کا کیا مطلب ہے اوروہ مولانا ابوالعطاء صاحب فرماتے ہیں کہ: ’’پہلا نظریہ ہے کہ آنحضرتa کی خاتمیت نے دیگر انبیاء کے فیوض کو بند کرکے فیضان محمدی کاوسیع دروازہ کھول دیا ہے۔آپa کی امت کے لئے آپ کی پیروی کے طفیل وہ تمام انعامات ممکن الحصول ہیں جو پہلے منعم علیہم لوگوں کو ملتے رہے ہیں۔‘‘ یہ ایک نظریہ ہے۔ پھر آگے فرماتے ہیں: ’’دوسرا نظریہ ہے کہ آنحضرتa کی خاتمیت فیضان محمدی کے بند ہونے کے مترادف ہے۔ آپa کی امت ان تمام اعلیٰ انعامات سے محروم ہوگئی ہے جو بنی اسرائیل یا پہلی امتوں کو ملتے رہے ہیں۔‘‘
    تو میں یہ عرض کروں گا کہ یہاں مولانا جو فرمارہے ہیںاور جو وہ تفسیر کر رہے ہیں۔ دو نظریے دے رہے ہیں۔ کیا اس کا یہ مطلب نہیں کہ ایک نقطہ نظر سے کوئی نبی نہیں آئیںگے… امتی ہو،شرعی ہو؟دوسرے نقطہ نظر سے محمدؐ کی امت سے ایسے نبی آئیںگے جو بنی اسرائیل میں آتے رہے ہیں،یعنی غیرشرعی امتی ہیں؟یہ نقطہ نظر۔کیا یہ نہیں لکھا: ’’میں نہیں کہتا کہ ایسے لوگ آئیںگے جن سے نبیوں جیسا سلوک کیا جائے۔‘‘
    690ان کا نہیں ذکر۔ صاف یہ مطلب تھا اور یہ مطلب میں اخذ کرتاہوں اس سے کہ ایک نقطہ نظر کے مطابق کوئی نبی نہیں آسکتا کسی قسم کا۔ آپ خواہ اسے کہیں کہ ’’دروازہ بند ہوگیا، فیض کی کھڑکی بندہوگئی‘‘ دوسرے میں کہتے ہیں ’’نہیں، وہ فیض کی کھڑکی کھلی ہے یا فیض کا دروازہ کھلا ہے اور نبی آسکتے ہیں۔‘‘ کیا اس Passage (پیرے) کایہ مطلب نہیں؟یا کچھ اور مطلب ہے؟
    مرزاناصر احمد: یہ مطلب نہیںہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: آپ پھر بتائیں اس کا کیامطلب ہے؟
    مرزاناصر احمد: یہ جو عبارت ہے،اس میں نبوت کا نام ہی نہیں ہے۔ عبارت یہ کہتی ہے: ’’خاتمیت محمدیہ یاآنحضرتa کو خاتم النّبیین ماننے والوں کے…‘‘
    جناب یحییٰ بختیار: ’’ماننے والوں کے۔‘‘
    مرزاناصر احمد: ’’…ماننے والوں کے دونظریے ہیں‘‘جوآنحضرتa کو خاتم النّبیین یقین کرتے ہیں۔آگے دو نظریے ہیں ان کے : ’’ایک نظریہ یہ ہے…پہلا نظریہ کہ آنحضرتa کی خاتمیت نے دیگر انبیاء کے فیوض کو بند کرکے فیضان محمدی کا وسیع دروازہ کھول دیاہے۔ آپؐ کی امت کے لئے آپؐ کی پیروی کے طفیل وہ تمام انعامات…‘‘
    ایک،دو،تین،چار نہیں،’’وہ تمام انعامات‘‘ جس میں صالحیت کا انعام ہے،شہید بننے کا انعام ہے،صدیق بننے کا انعام ہے،قطب اورابدال بننے کاانعام ہے،جس میںآئمہ بننے کا انعام ہے،جس میں نیک بندے بننے کا انعام ہے،جس میں یہ دی گئی ہے بشارت کہ تمہیں میری امت کے جو عام انسان ہے ان کو بھی اﷲ تعالیٰ سچی خوابیں دکھائے گا،یہ انعام ہے،جس میں یہ انعام ہے کہ امت محمدیہ کے تمام افراد بحیثیت مجموعی ’’انتم الاعلون ان کنتم مومنین‘‘
    اگر ایمان کی شرائط پر پورے اتر رہے ہوںگے توغالب آئیںگے اور مغلوب نہیں ہوں گے۔ یہ ساری امت کے ہر قسم کے مسلمان کے لئے یہ انعامات ہیں۔ تو یہاں پر ایک وہ ہیں کہ وسیع دروازہ کھول دیا ہے آپؐ کی امت کے لئے،آپؐ کی پیرو ی کے طفیل، اور وہ تمام انعامات ممکن691 الحصول ہیں۔ یہاں آکے آگے کچھ قید لگائی ہے:’’جو پہلے منعم علیہم لوگوں کو ملتے رہے ہیں‘‘ اور منعم علیہم گروہ جو ہے،مختلف گروہ، ایک نہیں چار ہیں وہ۔ ان کاذکر قرآن کریم میں ایک دوسری جگہ آیا ہے،جس کی طرف سورۃ فاتحہ میں یہ ارشاد ہے: صراط الذین انعمت علیھم
    (ان لوگوں کی راہ جن پر تو نے انعام کیا…منعم علیہ)
    اور دوسری جگہ چار کیٹیگریز اس کی بنائی ہیں۔ تو یہاں نہ نبوت کا نام، نہ صرف نبوت کے مفہوم کے متعلق کچھ کہاگیا ہے: ’’دوسرا نظریہ یہ ہے کہ آنحضرتa کی خاتمیت فیضان محمدی کے بند ہونے کے مترادف ہے۔ آپ کی امت ان تمام اعلیٰ انعامات سے محروم ہوگئی جو بنی اسرائیل یا پہلی امتوں کو ملتے رہے ہیں۔‘‘
    یہ میں مثال دے کے اس کو واضح کرتاہوں۔ انجیل میں ہے کہ بچے بھی نبوتیں کریں گے…لغوی Sense (معنی) میں۔ تو یہ بھی ایک انعام تھا کہ ان کو سچی خوابیں آئیںگی۔ ان کو بشارتیں ملیںگی۔ یہ ایک زبردست فرمان یعنی جو امت محمدیہؐ کو آج دوسرے مذہبوں سے علیحدہ کرتاہے۔ یہ فرقان بھی ہے۔ تویہاں تویہ فیضان کے بند ہونے کا سوال ہے۔ نبو ت کے بند ہونے کی بحث ہی نہیں ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: ٹھیک ہے جی، وہ آپ نے…
    مرزاناصر احمد: جو میں سمجھتاتھا،میں نے بتادیا۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں،میں یہ…چونکہ میرے لئے جو بات سمجھ میں نہیں آئی، وہ یہ تھی کہ میں نے یہ مولانامودودی صاحب کا کتابچہ بھی پڑھا۔ انہوں نے کسی جگہ بھی اس بات کو نہیں کہا کہ اﷲ کا فیض بند ہو گیاہے…جس Sense (معنی) میں آپ کہہ رہے ہیں۔ انہوں نے صاف یہ کہا ہے کہ:’’اورنبی نہیں آسکتا۔‘‘اور اس کے جواب میں یہ کہا ہے کہ ’’نہیں آسکتاہے۔‘‘ کہ’’نہیں‘‘ آسکتاہے۔‘‘یہ فیض اس سے متعلق ہے۔ میں اس واسطے کہہ رہاہوں کہ اگر جواب ہے تو…
    مرزاناصر احمد: جی،یہ ٹھیک ہے، میں نے توجو مجھے سمجھ آئی بتادیا۔
    692جناب یحییٰ بختیار: نہیں، دیکھیں ناں،آپ اس جواب کو پڑھیںگے، اس کتابچے کے ساتھ جس کے لئے اعتراض ہے،جس کے جواب میں لکھی گئی ہے یہ کتاب۔وہاں صرف یہ ہی سوال اٹھایا گیا۔آپ پھر اس کو Verify کریں۔
    مرزاناصر احمد: وہ تو کتاب اس وقت میرے سامنے نہیں۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں؟آپ پھر Verify کرلیجئے…
    مرزاناصر احمد: ہاں، ہاں Verify کرلوں گا۔
    جناب یحییٰ بختیار: …کیونکہ اس میں تو کوئی Dispute ہی نہیں ہے…
    مرزاناصر احمد: ٹھیک ہے، وہ Verify کرلیںگے۔
    جناب یحییٰ بختیار: …کہ اگر مولانا مودودی صاحب نے یہی کہا ہے کہ اﷲ کا فیض اس شکل میں بند ہوگیا ہے جیسے آپ نے کہا،تب توبات ٹھیک ہو جائے گی۔ انہوں نے کہیں نہیں کہا…میری سمجھ کے مطابق۔
    مرزاناصر احمد: جی،وہ ٹھیک ہے۔ وہ چیک کرکے پھر میں بتادوںگا۔
    جناب یحییٰ بختیار: انہوں نے یہی کہا ہے کہ جہاں تک نبی کا تعلق ہے…(ایک رکن سے)ہے کتاب وہ؟(مرزاناصراحمد سے)میرے پاس اس وقت نہیںہے۔
    مرزاناصر احمد: نہیں،اگر مل گئی تو انشاء اﷲ،شام کی Sitting میں اگر مل گئی تو میں بتادوںگا۔
    جناب یحییٰ بختیار: تو اب اس لئے آپ اسے دیکھ لیں۔ اس کے بعد یعنی مولانا مودودی نے یہ نہیں کہا کہ جس قسم کا فیض آپ کہہ رہے ہیں،بند ہوگیا۔ انہوں نے یہی کہا ہے…
    مرزاناصر احمد: وہ بات میں سمجھ گیاہوں۔ ہاں،وہ بات میں سمجھ گیاہوں۔ لیکن بغیر اس ریفرنس کے،جو اس کامطلب میں سمجھتا تھا وہ میںنے بیان کردیاہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں جی،وہ پھر آپ کو دیکھ لیں۔
    مرزاناصر احمد: جی، وہ دیکھ لوں گا۔
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں، شام کی Sitting میں کرلیںگے۔
    693مرزاناصر احمد: آج میں کوشش کروں گا کہ وہ مل جائے کتاب۔
    جناب یحییٰ بختیار: اب میں آپ کی توجہ مرزاصاحب!کچھ اورحوالے ہیں، ان کی طرف دلاناچاہتاہوں۔ آپ دیکھ لیں کہ یہ صحیح ہیں یا آپ Admit کرتے ہیں: ’’دافع البلائ‘‘ میں ص۱۱(خزائن ج۱۸ص۲۳۱)میں لکھا ہے کہ:’’سچا خدا وہی خدا ہے جس نے قادیان میں اپنا رسول بھیجا۔‘‘
    مرزاناصر احمد: جی۔
    جناب یحییٰ بختیار: یہ آپ دیکھ لیں اور آپ فرمائیں کہ یہاں مطلب ان کا ایک نبی کو بھیجنا ہے،امتی نبی یا ایک رسول کو بھیجنا ہے کہ مہدی کی طرف اشارہ ہے یہ؟ جیسا بھی آپ سمجھتے ہیں وہ ریفرنس دیںآپ۔ یہ جی یہاں جو ہے ناں۔ اس سے میں نے وہ لکھا یہاں جو Page10-11 ہے اس کتا ب میں۔اچھا۔ ہاں ،ٹھیک ہے۔
    مرزاناصر احمد: صفحہ کونسا ہے؟
    جناب یحییٰ بختیار: ۲۳۱صفحہ خزائن کا ہے۔ اس کتاب کا جس میں ان سے حوالے دیئے ہیں ’’دافع البلائ‘‘صفحہ ۱۰،۱۱۔
    مرزاناصر احمد: جی،جی،ٹھیک ہے ص۲۲۹؟
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں جی،۲۳۱۔
    مرزاناصر احمد: ۲۳۱
    جناب یحییٰ بختیار: اس میں جو Page گیارہ آجاتاہے ناجی…
    مرزاناصر احمد: جی، جی۔
    جناب یحییٰ بختیار: …اس میں جو پیراختم ہورہا ہے۔پہلا پیرا۔اس میں لکھا ہے : ’’اگر ان لوگوں نے ایسا نہ کیا تو پھر یہی سمجھاجائے گا کہ سچا خداوند وہی خدا جس نے قادیان میں اپنارسول بھیجا۔‘‘
    مرزاناصر احمد: یہ …سوال یہ ہے کہ یہاں’’رسول‘‘ کالفظ اپنے لئے استعمال کیا ہے؟جی؟آپ نے یہ سوال کیا؟
    694جناب یحییٰ بختیار: ہاں جی۔ اب ایک دوسرا سوال میں عرض کروںگا۔ یہ ’’حقیقت الوحی‘‘ ص ۳۹۱، خزائن ج۲۲ ص۴۰۷ پر مرزا صاحب فرماتے ہیں:’’نبی کا نام پانے کے لئے میں ہی مخصوص کیاگیا اور دوسرے تمام لوگ اس نام کے مستحق نہیں۔‘‘ یہ بھی آپ Verify کرلیں۔
    مرزاناصر احمد: جی، یہ ہوگا،غالباً۔ ابھی میں نے یہی بتایا ہے کہ امت محمدیہ تیرہ سو سال تک یہی سمجھتی رہی ہے۔
  4. ‏ دسمبر 2, 2014 #14
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (امت نے کبھی نہیں سمجھا کہ قادیان میں غلام احمد…)
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، امت محمدیہ کبھی یہ نہیں سمجھتی رہی کہ قادیان میں مرزا غلام احمد…
    مرزاناصر احمد: نہیں، امت محمدیہ یہ سمجھتی رہی ہے کہ ایک کی بشارت دی گئی ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، وہ اورسوال ہے…میں یہاں پوچھتاہوں،یہاں اس سے مطلب ہے…
    مرزاناصر احمد: ہاں، یعنی بشارت کے جو مورد ہیں وہ…
    جناب یحییٰ بختیار: …’’نبی کا نام پانے کے لئے‘‘…
    مرزاناصر احمد: ہاں۔
    جناب یحییٰ بختیار: …یہ نہیں کہہ رہا کہ ’’مسیح مجھے…‘‘
    مرزاناصر احمد: نہیں، نہیں۔امتی نبی۔
    جناب یحییٰ بختیار: امتی نبی’ہاں: ’’نبی کا نام پانے کے لئے میں ہی مخصوص کیاگیا اور دوسرے تمام اس نام کے مستحق نہیں۔‘‘ یہ اپنی طرف انہوں نے،اپنے بارے میں کہا؟
    مرزاناصر احمد: ہاں، ہاں،اپنے بارے میں۔
  5. ‏ دسمبر 2, 2014 #15
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (انبیاء سے میں کم نہیں ہوں،مرزاقادیانی کا اعلان)
    695جناب یحییٰ بختیار: اب ایک اورحوالہ۔ ان کے ایک دو شعر ہیں، مرزاصاحب کے ’’درثمین‘‘میں Page288 پر:

    انبیاء گرچہ بودہ اند بسے
    من بہ عرفان نہ کمترم زکسے

    آں چہ داد است ہر نبی راجام
    داد آں جام را مرا بتمام

    (نزول المسیح ص۹۹،خزائن ج۱۸ص۴۷۷)

    مرزاناصر احمد: یہ شیعہ حضرات کی…
    جناب یحییٰ بختیار: یہ مرزاصاحب کے شعر ہیں ناں جی؟
    مرزاناصر احمد: یہ مرزاصاحب کے شعر ہیں اورشیعہ حضرات کے اس اقتباس کا ترجمہ ہے قریباً ،جومیں نے کل پڑھ کر سنایا تھا کہ: ’’وہ کہیں گے کہ جس نے ابراہیم علیہ السلام کو دیکھناہو، وہ مجھے دیکھ لے۔‘‘ وغیرہ وغیرہ۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، یہاں وہ یہ فرماتے ہیں کہ جو…
    مرزاناصر احمد: ’’جو روحانی جام انبیاء کو دیئے گئے تھے، وہ مجھے نبی اکرمؐ کے طفیل بہتر رنگ میں دیئے گئے ہیں۔‘‘
    جناب یحییٰ بختیار: میں ترجمہ کرتاہوں،اگر آپ سمجھیں کہ ٹھیک ہے…
    مرزاناصر احمد: جی،بہت اچھا۔
    جناب یحییٰ بختیار: ’’اگرچہ اس دنیا میں بہت سے نبی ہوئے ہیں، لیکن ان میں سے کسی سے بھی، عرفان میں کسی سے بھی کم نہیں ہوں…‘‘
    مرزاناصر احمد: کسی چیز میں؟
    جناب یحییٰ بختیار: ’’ان میں سے کسی بھی عرفان میں میں کم نہیں ہوں…‘‘
    مرزاناصر احمد: جی۔
    جناب یحییٰ بختیار: ’’جس نے ہر نبی کو جام دیا،اس نے مجھے بھی بھر کر جام دیا۔‘‘
    مرزاناصر احمد: جی۔
  6. ‏ دسمبر 2, 2014 #16
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (مرزاقادیانی، انبیاء میں کسی سے کم نہیں)
    696جناب یحییٰ بختیار: یعنی اپنے متعلق وہ نبی کا کہہ رہے ہیں کہ ’’میں کسی سے کم نہیں ہوں۔‘‘
    مرزاناصر احمد: ٹھیک ہے۔ اپنے متعلق کہا ہے۔
  7. ‏ دسمبر 2, 2014 #17
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (حضور علیہ السلام کے بعد صرف ایک نبی ہونا لازم ہے)
    جناب یحییٰ بختیار: اب ایک حوالہ ہے ’’تشہیذ الاذہان‘‘قادیان، اگست ۱۹۱۷ئ۱؎…
    مرزاناصر احمد: ہاں، یہ ایک رسالہ چھپا کرتاتھا۔
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں، اس رسالے کا ہے ۔وہ…
    مرزاناصر احمد: اس کے مضمون لکھنے والے کون ہیں؟
    جناب یحییٰ بختیار: …یہ میں نہیں جانتا جی۔ اس واسطے میں آپ سے Verification (تصدیق) چاہتاہوں۔
    مرزاناصر احمد: جی۔
    جناب یحییٰ بختیار: یہ کوئی اتھارٹی ہے نہیں۔ ان کا ایک مارچ ۱۹۱۴ء کا ہے اور حوالہ۲؎ اورایک حوالہ ہے اگست۱۹۱۷ء کا۔
    ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    ۱؎ (تشہیذ الاذہان قادیان ج۱۲ ش۸ ص۱۱، بابت ماہ اگست ۱۹۱۷ئ) پر مرزا کے حوالہ سے مضمون نگار نے لکھا ہے: ’’آنحضرتﷺ کے بعد صرف ایک ہی نبی کا ہونا لازم ہے اور بہت سارے انبیاء کا ہونا خداتعالیٰ کی بہت سی مصلحتوں اور حکمتوں میں رخنہ واقع کرتا ہے۔‘‘
    ۲؎ (تشہیذ الاذہان قادیان ج۹ ش۳ ص۳۰ تا ۳۲، بابت مارچ ۱۹۱۴ئ) میں ہے: ’’پس اس لئے امت محمدیہ میں صرف ایک شخص نے نبوت کا درجہ پایا اور باقیوں کو یہ رتبہ نصیب نہیں ہوا۔ کیونکہ ہر ایک کا کام نہیں کہ اتنی ترقی کر سکے۔ بے شک اس امت میں بہت سارے ایسے لوگ پیدا ہوئے جو علماء امتی کا نبیاء بنی اسرائیل کے حکم کے ماتحت انبیائے بنی اسرائیل کے ہم پلہ تھے۔، لیکن ان میں سوائے مسیح موعود کے کسی نے بھی نبی کریمa کی اتباع کا اتنا نمونہ نہیں دکھایا کہ نبی کریمﷺ کا کامل ظل کہلا سکے۔ اس لئے نبی کہلانے کے لئے صرف مسیح موعود مخصوص کیاگیا۔‘‘

    ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    مرزاناصر احمد: دونوں ’’تشہیذ الاذہان؟‘‘
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں جی۔ تو اس میں لکھا ہے…یہ وہ خود مرزاصاحب نہیں کہہ رہے…
    مرزاناصر احمد: نہیں جی۔
    جناب یحییٰ بختیار: …کیونکہ ۱۹۱۷ء اور۱۹۱۴ء کی بات ہے: ’’آنحضرت کے بعد صرف ایک ہی نبی کا ہونا لازم ہے اور بہت انبیاء کا ہونا خدا تعالیٰ کی بہت سی مصلحتوں اورحکمتوں میں رخنہ پیداکرتاہے۔‘‘ یہ آپ Verify کردیں۔
    مرزاناصر احمد: نہیں، یہ مضمون کے لحاظ سے میں تصدیق کرتاہوں،الفاظ کے لحاظ سے میں تصدیق نہیں کرتا۔ یہ مضمون جو ہے وہ ہمارے عقیدے کے مطابق ہے۔
    697جناب یحییٰ بختیار: ہاں: ’’آنحضرت کے بعد صرف ایک ہی نبی کا ہونا لازم ہے اور بہت انبیاء کا ہونا خدا تعالیٰ کی بہت سی مصلحتوں اورحکومت میں رخنہ پیداکرتاہے۔‘‘
    اب ، مرزاصاحب!یہاں جو ہے آپ کے اورباقی مسلمانوں کے نقطہ نظر میں کیا یہ فرق نہیں کہ وہ بھی اسی عقیدے کے ہیں، صرف یہ سمجھتے ہیں کہ آنحضرتa کے بعد انبیاء کا آنا خدا تعالیٰ کی بہت سی مصلحتوں اورحکمتوں میں رخنہ پیداکرتاہے۔ ان کایہ عقیدہ ہے کہ آنحضرتa کے بعد کوئی نبی نہیں آئے گا کیونکہ اﷲ کی مشیت یہی تھی کہ نہ آئے اور اگر آئے تو وہ حکومت میں رخنہ پیداکرتاہے۔آپ کہتے ہیں کہ نہیں، ایک اورنبی آسکتاہے۔ایک تک رخنہ نہیں پیداہوتا۔ ایک سے زیادہ اگرآگئے تورخنہ پیداہوگا۔
    مرزاناصر احمد: یہ اگر…سوال ختم ہوگیاہے؟
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں جی۔
    مرزاناصر احمد: میں نے ابھی عرض کیا تھا کہ امت محمدیہ تیرہ سو سال تک یہ عقیدہ رکھتی رہی ہے کہ ایک نبی اس امت میں آئے گا اور اس کے بعد کا مضمون فلسفیانہ ہے کہ یہ کیوں صرف ایک کی بشارت دی گئی، اور تیرہ سو سال تک امت محمدیہ صرف ایک مسیح’’نبی اﷲ‘‘جس کو چار دفعہ حدیث مسلم میں کہاگیا ہے۔ صرف اس کے آنے کی انتظار کیوں کی گئی۔ یہ کیوں کا جواب فلسفیانہ ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: اب مرزاصاحب!سوال یہ ہے کہ ایک نبی آئے گا۔ آپ کہتے ہیں کہ امتی نبی آئے گا،اور…
    مرزاناصر احمد: نہیں، ہمارا فرق جو ہے، اگر چاہیں تو میں بتاؤں۔ تیرہ سو سال تک جو عقیدہ تھا،وہ یہ تھا کہ مسیح نبی اﷲ آئے گا۔ یہ امت کا عقیدہ ہے۔ لیکن معین کوئی شخص انہوں نے اس واسطے نہیں بتائی کہ وہ آیا نہیں تھا۔ ہمارا اورباقی ہمارے بزرگوں کا صرف یہاں فرق نظر آتا ہے اور یہ ہونا بھی چاہئے کہ ہم یہ کہتے ہیں کہ جس کا انتظار تیرہ سو سال سے کیاجارہا تھا، وہ آگیا اور وہ ہمارے سلف صالحین کہہ رہے تھے کہ جس کا انتظار تیرہ سو سال سے کیاجارہا تھا، وہ آنے والا ہے۔ ’’آگیا‘‘ اور ’’آنے والا‘‘کا فرق اورہوناچاہئے۔ عقلاً کیوں کہ وہ پہلی صدیاں تھیں اور ہم اس صدی میں داخل ہوگئے۔
    698جناب یحییٰ بختیار: دو باتیں ہیں،مرزاصاحب! ایک تو یہ کہ سب کاعقیدہ ہے کہ مسیح آئیںگے۔ اس پر تو Controversy نہیں تھی۔ ایک مہدی نے آنا، ان کو نبوت ملنی بھی نہیں، وہ (عیسیٰ علیہ السلام) تو پہلے سے نبی Appoint ہوئے تھے۔ پہلے سے نبی مقرر ہوئے تھے۔ یہ حقیقت ہے کہ نہیں؟
    مرزاناصر احمد: پہلے سے وہ نبی تھے جو شریعت موسویہ…
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، نبوت ان کو ملی تھی؟
    مرزاناصر احمد: نہیں۔ شریعت موسویہ کو جاری کرنے کے لئے حکم خدا وندی کے ساتھ اس دنیا میں آئے تھے۔
    جناب یحییٰ بختیار: مرزاصاحب!ان کی اتھارٹی Change ہوگئی۔ ان کو کہا کہ امت میں رہوگے تم۔ مگر نبی وہ پہلے تھے۔ ان کی اس میں سوال ہی پیدانہیں ہوتا۔
    مرزاناصر احمد: پھر اصل میں وہ ہی ٹھیک ہے۔ ایک نقطہ نگاہ سے ٹھیک ہے۔ بس صرف یہ اختلاف ہے ناں ہمارا۔
    جناب یحییٰ بختیار: میں تو یہ عرض کررہاتھا کہ یہاں یہ کہہ رہے ہیں کہ مسیح کا سوال نہیں ہے۔ یہاں توصاف کہہ رہے ہیں کہ : ’’آنحضرتa کے بعد صرف ایک نبی کا ہونا لازم ہے…‘‘
    مرزاناصر احمد: وہی مراد ہے۔دوسری جگہ اس کا Explanation ہے۔

  8. ‏ دسمبر 2, 2014 #18
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (مسیح بن مریم علیہ السلام دمشق میں آئیں گے ناکہ…)
    جناب یحییٰ بختیار: …بہت انبیاء کا ہونا خدا تعالیٰ کی بہت سی مصلحتوں اور حکمتوں میں رخنہ پیداکرتاہے۔‘‘
    بہت کا توسوال ہی پیدانہیںہوتا۔ سوال تو اگر مسیح کا ہوتا تب تو وہ یہاں پرآگئے تھے اور باقی وہ جو حدیث میں تھا۔ وہ تو اوربات ہے کہ مریم کا بیٹا ہوگا اور دمشق میں آئے گا۔ اس کی تفصیل میں نہیں جاتا کیونکہ یہاں آپ نے جو فرمایا کہ ’’ایک امتی نبی آئے گا،اور ہمارا یہ بھی عقیدہ ہے کہ مرزاغلام احمد صاحب وہ امتی نبی ہیں، اور ہمارا یہ بھی عقیدہ ہے کہ وہ مسیح…‘‘
    مرزاناصر احمد: مسیح، وہی مسیح جس کا انتظار کیاجاتارہاتھا۔
    جناب یحییٰ بختیار: پھر آپ نے یہ نہیں کہاکہ ’’ہمارا عقیدہ ہے کہ وہ مسیح ہیں۔ امتی نبی بھی ہیں And also…‘‘
    699مرزاناصر احمد: نہیں، نہیں۔ اوہو!ایک آدمی جو ہے وہ امتی نبی بنا ہی مسیح ہونے کی حیثیت سے ہے۔ لیکن اگر خالی ’’مسیح‘‘ کہا جائے توہوسکتاتھا، یا سوال…یہ سمجھا جاتا کہ ہم امتی نبوت کو چھپانے کی کوشش کررہے ہیں۔ اس واسطے یہ اعلان کیا۔ اسی شخص کو کہنے والے محمدؐ نے مسیح بھی کہا اور ’’مہدی‘‘ بھی کہا اور ’’مسیح ناصری‘‘آنے والے کے متعلق کہا کہ وہ نازل ہوگا اور پھر وہ جو بحث ہے ناں کہ وہ کون ہے،پرانا ہے یا نیا ہے۔ دراصل اسی نکتہ کے فیصلے کے اوپر یہ سارا مسئلہ اٹکتاہے۔اختلافات…
    جناب یحییٰ بختیار: میں ایک حوالہ اوربھی،پڑھ دیتاہوں۔ اس کے بعد پھر میں آپ سے مزید Clarification (وضاحت) کے لئے درخواست کروںگا۔
    مرزاناصر احمد: جی۔
  9. ‏ دسمبر 2, 2014 #19
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (مرزاقادیانی کا کلام، دیگر انبیاء کے کلام کی طرح کلام الٰہی ہے)
    جناب یحییٰ بختیار: یہ ہے جی’’ایک غلطی کا ازالہ‘‘اس سے: ’’اور میں بیت اﷲ میں کھڑے ہوکر یہ قسم کھا سکتاہوںکہ وہ پاک وحی جو میرے پر نازل ہوتی ہے، وہ اسی خدا کا کلام ہے جس نے حضرت موسیٰ ،حضرت عیسیٰ اور حضرت محمد مصطفیﷺپر اپنا کلام نازل کیا تھا۔
    (ایک غلطی کا ازالہ ص۶،خزائن ج۱۸ص۲۱۰)
    مرزاناصر احمد: ہاں، یہ ٹھیک ہے،غالباً۔
    جناب یحییٰ بختیار: اب،مرزاصاحب!آپ اس پر ذرا کچھ روشنی ڈالیں کہ جب مرزا صاحب فرماتے ہیں کہ: ’’میں بیت اﷲ میں کھڑے ہوکر قسم کھاسکتاہوں کہ وہ پاک وحی جو میرے پر نازل ہوتی ہے…‘‘ ایک نبی کی حیثیت سے بول رہے ہیں: ’’مجھ پروحی جو نازل ہوتی ہے۔‘‘
    ’’…وہ اسی خدا کاکلام ہے جس نے حضرت موسیٰ،حضرت عیسیٰ،حضرت محمد مصطفیa پر اپنا کلام نازل کیاتھا۔‘‘ یہ ان تینوں سے ایک علیحدہ نبی ہوکے اپنے کلام کاذکرکررہے ہیں۔
    700مرزاناصر احمد: نہیں،نہیں،بالکل نہیں۔ قسم یہ کھائی ہے…مجھے جواب دینے کی اجازت ہے؟
    جناب یحییٰ بختیار: …حضرت عیسیٰ کا ذکرکررہے ہیں…
    مرزاناصر احمد: مجھے جواب دینے کی اجازت ہے؟
    جناب یحییٰ بختیار: …یہی کہہ رہے ہیں کہ ’’میں وہی مسیح ہوں‘‘…
    مرزاناصر احمد: ہاں،آپ سوال پورا کر لیجئے۔
    جناب یحییٰ بختیار: …اورساتھ کہہ رہے ہیں کہ ’’وہ وحی جو محمدؐ پر آتی ہے۔ یہ میری وحی ویسی ہی پاک ہے۔یہ میری وحی ویسی ہی پاک ہے جو عیسیٰ پرآئی، جو موسیٰ پرآئی۔‘‘
    تو تین نبیوں کا ذکر کرکے ’’میں چوتھا نبی ہوں‘‘میرا یہ اندازہ ہے کہ یہ مطلب تھا ان کا۔ آپ مزید تفصیل سے اس کو اگر کرنا چاہیں تو…
    مرزاناصر احمد: آپ نے یہاں صرف منبع وحی کی بات کی ہے۔ کیفیت وحی کی بات نہیں کی۔ آپ یہ کہتے ہیں کہ جس چشمہ سے قرآن عظیم جیسی عظیم ہدایت نکلی، جاری ہوئی، وہی مجھ سے بات کرنے والا ہے۔ یہ نہیں بتاتے کہ’’قرآن کریم کی ہدایت کے مطابق یہ اس کے برابر میری وحی ہے۔‘‘کہتے …یہاں یہ بتارہے ہیں دنیا کو کہ ’’میں ہر قسم کی قسم کھانے کے لئے تیار ہوں کہ میری وحی شیطانی وحی نہیں،بلکہ الٰہی وحی ہے۔‘‘محمدؐ کی وحی کے مقابلے میں حضرت موسیٰ اور عیسیٰ کو کس طرح رکھاجاسکتاہے؟ اگر جو آپ استدلال کر رہے ہیں وہ کریں تو ہم تو کافروں سے بھی بڑھ کر کافر بن جاتے ہیں۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں،نہیں،مرزاصاحب!میرا یہ مطلب نہیں…
    مرزاناصر احمد: صرف چشمہ وحی…
    جناب یحییٰ بختیار: …میں نے یہ نہیں کہا کہ وہ یہ فرمارہے ہیں کہ ’’میری وحی ان سے بہتر وحی ہے۔‘‘نہیں،میں نے یہ نہیں کہا۔’’یہ بھی اﷲ کی طرف سے آئی ہوئی وحی ہے۔‘‘ وہ یہ کہہ رہے ہیں۔
    مرزاناصر احمد: ’’ویسی ہی سچی ہے۔‘‘
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں،’’سچی وحی ہے اور ایسی پاک ہے جو اﷲ نے محمدؐ پر بھیجی۔‘‘
    701مرزاناصر احمد: جو وحی اﷲ کی طرف…
    جناب یحییٰ بختیار: میراایک پوائنٹ تھا…
    مرزاناصر احمد: اچھاجی!
    جناب یحییٰ بختیار: …وہ یہ تھا کہ یہ ایک مختلف وحی ہے۔ یہ Emphasise کر رہے ہیں کہ یہ ایک مختلف وحی ہے جو ایک مختلف نبی پرآتی ہے۔ یہ مضمون ظاہر کررہا ہے کہ نہیں؟
    مرزاناصر احمد: وحی جو ہے اﷲ تعالیٰ کی،ہمارے عقیدے کے مطابق ان انبیاء پر بھی نازل ہوئی جو کوئی شریعت نہیں لائے تھے۔ ہمارے نزدیک، ہمارے عقیدہ کے مطابق خدائے پاک کے پاک الفاظ میں وحی امت محمدیہ کے صلحاء پربھی نازل ہوئی۔ جہاں تک ان کی پاکیزگی کا سوال ہے۔ اﷲ کا تعلق ہے۔ چشمہ وحی سے یعنی Source اس کا کیاتھا۔ اگر وہ اﷲ کا کلام ہے تو اﷲ کے کلام کے متعلق یہ کہنا کہ خدا کے کلاموں میں یہ فرق کرناپڑے گا کہ بعض زیادہ پاک او ربعض کم پاک ہیں۔ ہماری عقل میں تو نہیں آتی یہ بات۔ جو خدا کی طرف سے آئی بات، وہ خدا کی طرف سے آنے والی تمام باتوں کے مطابق اپنے پاک چشمہ کی وجہ سے ایک جیسی ہے۔ لیکن اپنی کیفیت میں بڑااختلاف رکھتی ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: مرزاصاحب!معاف کیجئے،میں نے یہ نہیںکہا کہ وہ یہ کہہ رہے ہیں کہ باقی وحی پاک نہیں ہے یا ان کی وحی، پاک نہیں ہے۔اس میں تو کوئی Dispute نہیں ہے۔ جہاں تک…مضمون بڑاصاف ہے۔ وہ فرماتے ہیں کہ ’’میری وحی بھی ویسی ہی پاک ہے جیسی باقی انبیاء کو وحی ملی ہے‘‘جن کاوہ ذکر کرتے ہیں۔ میں تویہ عرض کررہاہوں کہ یہ مضمون یہ ظاہر کر رہا ہے کہ ان پر مختلف وحی آئی، ایک مختلف نبی کی حیثیت سے۔
    مرزاناصر احمد: یہ نہیں ظاہرکررہاہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: ابھی میں پھرپڑھتاہوں…
    مرزاناصر احمد: نہیں،نہیں،میں۱؎…
    ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    ۱؎ قادیانی حضرات مرزاناصراحمد کی بے قراری ملاحظہ کریں کہ وہ کس طرح مرزا کی عبارت سے جان چھڑانے کے درپے ہیں۔ لیکن ریچھ کا کمبل ان کونہیں چھوڑتا۔
    ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    Mr. Yahya Bakhtiar: …
    مرزاناصر احمد: میرا جواب سن لیجئے۔ آپ نے اس جگہ حضرت موسیٰ اور عیسیٰ کا نام لیا ہے۔ حالانکہ عیسیٰ علیہ السلام کی وحی، موسیٰ علیہ السلام کی شریعت کو منسوخ کرنے والی نہیں ہے اور702 یہ خود مثال بتارہی ہے کہ کیا مطلب ہے۔ وہ مطلب نہیں جو اس کا لیا جاسکتاہے، کوئی اور لے لے اس کا۔ حضر ت عیسیٰ علیہ السلام پر جو وحی نازل ہوئی اس نے شریعت موسویہ کو منسوخ نہیں کیا۔ بلکہ شریعت موسویہ کی تائید کرنے والی اورشریعت موسویہ کو بنی اسرائیل کے اندرمستحکم کرنے کے لئے اور جاری کرنے کے لئے اور ان کو ان کی زندگیوں میں ،بنی اسرائیل کی زندگیوں میں موسوی شریعت کو قائم کرنے کے لئے حضرت عیسیٰ کی ساری وحی تھی،کوئی شریعت نہیں تھی۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، کوئی نئی شریعت نہیں تھی۔ میں یہ نہیں کہتا کہ نئی شریعت تھی۔ مگر عیسیٰ علیہ السلام ایک مختلف نبی تھے اور اپنی وحی ان پر مختلف آئی جو موسیٰ علیہ السلام پر آئی تھی۔ سوال یہ ہے۔ مختلف۔ سوال یہاں پیداہوتاہے کہ یہ امت…
    مرزاناصر احمد: اختلاف معنوی…
    جناب یحییٰ بختیار: …محمدیہؐ کا نبی ہے۔ ’’اسی طرح جیسے موسیٰ اور عیسیٰ مختلف تھے، میں یہ کہتاہوں کہ میں اور محمدﷺa مختلف تھے۔‘‘یہ مضمون ظاہر کررہا ہے کہ نہیں؟اور یہ کہہ رہا ہے کہ ’’جو مجھ پر وحی نازل ہوئی ہے، وہ وحی نہیں ہے جو محمدﷺ پرنازل ہوئی ہے۔ اسی طرح پاک ہے۔‘‘
    مرزاناصر احمد: اختلاف معنوی اگر لیا جائے تونہیں،لیکن اختلاف لفظی لیا جائے تو ٹھیک ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں جی،لفظی ہے۔
    مرزاناصر احمد: نہیں،لفظی اختلاف، یعنی حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام، جن کو ہم امتی نبی سمجھتے ہیں،ان کو وحی کے ذریعہ یہ کہاگیا کہ: یقیم الدین… ان کے متعلق یہ کہاگیا کہ دین اسلام کو قائم کرنا اور مسیحی… ’’یقیم الدین ویحی الدین ویقیم الشریعہ‘‘ اور شریعت محمدیہ کا احیاء کرنا۔ اس …یہ اس کے سپرد کام ہے، اور اسی منصب کے ماتحت اﷲ تعالیٰ کی وحی نازل ہوگی جو لوگوں پر شریعت محمدیہ کے ،جوروشن اس کی تعلیمات ہیں۔ ان کو کھول کربیان کرے گی،اور نئے زمانے کے نئے مسائل کو شریعت محمدیہ،قرآن عظیم کی روشنی میں، اس وحی سے روشنی پاکر وہ دنیاپرثابت کرے گا کہ دین اسلام سچا ہے۔
  10. ‏ دسمبر 2, 2014 #20
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (دین کو قائم کرنے کے لئے نبی کی ضرورت نہیں)
    703جناب یحییٰ بختیار: مرزاصاحب!کیا یہ فرض نبی کا دعویٰ کئے بغیر کوئی شخص نہیں کر سکتا؟
    مرزاناصر احمد: کرسکتاہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: کرسکتاہے؟
    مرزاناصر احمد: بالکل کر سکتاہے۔یہ…
    جناب یحییٰ بختیار: چونکہ آپ نے کل فرمایا کہ وحی تو اور بزرگ ہو،ولی ہو…
    مرزاناصر احمد: یہ کرسکتاہے۔ لیکن چونکہ آپ نبی تھے۔ اس لئے آپ نے وہ مثالیں دے دیں۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، میں نے ویسے ہی…
    مرزاناصر احمد: جی،بالکل کر سکتاہے۔ ہر…
    جناب یحییٰ بختیار: اگر تو پھر شریعت وہی ہے…
    مرزاناصر احمد: جی۔
    جناب یحییٰ بختیار: …اور امت محمدیہؐ کے ہیں وہ، اوروہ کام کرنے کے لئے صرف آئے ہیں جو صرف ایک اوراولیاء کی حیثیت سے،محدث کی حیثیت سے، بزرگ کی حیثیت سے، اﷲ کی وحی کے ذریعہ روشنی حاصل کرنے کے بعد کر سکتے تھے توپھر اس نبوت کا فائدہ کیا ہے؟ اس کا اﷲ کا مطلب کیاتھا؟
    مرزاناصر احمد: دیکھیں نا، ہمارا عقیدہ یہ ہے کہ اﷲ نے آپ کو’’نبی‘‘ کہا اس لئے اس عقیدے کے بعد میں یہ جرأت کیسے کرسکتاہوں کہ اﷲ نے کیوں ایسا کیا۔ یہ تواﷲ ہی بتاسکتا ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: ہاں،مرزاصاحب!میں اس پرذراتھوڑی دیر کے بعدکچھ اور سوال پوچھوں گا،کیونکہ کئی سوالات آتے ہیں اور اس سے ہم کسی اور ہی چیز میں چلے جاتے ہیں۔ میری کوشش ہے اور آپ کو بھی تکلیف دی،اتنے دنوں تک یہ چیز چل رہی ہے۔ پھر سوال او ر آتے ہیں جن کی طرف میں بعد میں آؤں گا، کہ جو مہدی نے آناتھا یا مسیح نے آناتھا،اس کے بارے میں حدیث میں کیاہے،حضرت مریم کے بیٹے ہوںگے،دمشق میں آئیںگے،یہ چیزیں جو ہیں۔ میں اس اسٹیج پرنہیں جاتا۔کیونکہ اس میں مجھے معلوم ہے کہ آپ کے بھی اپنے جواب ہیں۔ مگر ہم ریکارڈ704 کے لئے یہ چیزیں…تاکہ کوئی غلطی نہ ہو۔ Clarification (وضاحت) کی ضرورت ہوگی۔ اس لئے بعد میں کچھ سوالات پوچھوں گا۔
    (Interruption)
    جناب یحییٰ بختیار: مرزاصاحب!ایک اورمضمون تھا جس کے متعلق میں نے آپ سے کچھ سوالات پوچھے تھے اورمیں نے عرض کیاتھا کہ میری سمجھ کے مطابق جو میں نے آپ کا لٹریچر تھوڑابہت پڑھا ہے یا جو مجھے سوالات دیئے ہیں اسمبلی کے ممبران صاحبان نے پوچھنے کے لئے،ان سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ آپ…کہ آپ…
    (Interruption)
    Mr. Yahya Bakhtiar: Mr. Chairman, I request that the members should pay attention because my question… I will wait till they have concluded the discussion, then I will proceed.
    (جناب یحییٰ بختیار: جناب چیئرمین صاحب!میں اراکین سے درخواست کروں گا کہ وہ میرے سوال اوربحث کی طرف متوجہ ہوں۔ وہ آپس میں بحث ومباحثہ کریں۔ اس وقت تک میں کارروائی روک لوں گا اوراس کے بعد مزید کارروائی ہوگی)
    (pause)
لڑی کی کیفیت :
مزید جوابات کے لیے دستیاب نہیں

اس صفحے کی تشہیر