1. Photo of Milford Sound in New Zealand
  2. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  3. Photo of Milford Sound in New Zealand
  4. Photo of Milford Sound in New Zealand

لیکھ رام چھ سال میں چھری سے مارا جائے گا ۔

محمود بھائی نے 'مسلم اور قادیانی مناظرہ' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ ستمبر 16, 2014

  1. ‏ ستمبر 16, 2014 #1
    محمود بھائی

    محمود بھائی پراجیکٹ ممبر رکن ختم نبوت فورم

    مرزا غلام احمد قادیانی نے روحانی خزائن جلد 18 صفحہ 553 پر لیکھرام کے حوالے سے لکھا کہ
    اور میں نے بھی اس کی نسبت موت کی پیشگوئی کی تھی کہ چھ برس تک چھری سے مارا جائے گا۔
    اس حوالے سے ایک قادیانی سے جوگفتگو ہوئی وہ ملاحظہ فرمائیں۔

    • Salman Ahmad
      مرزا قادیانی نے خ ج 18 ص 553 پر لیکھ رام کت حوالے سے کہا اور میں نے بھی اس کی نسبت موت کی پیشگوئی کی تھی کہ چھ برس تک چھری سے مارا جائے گا۔ ،،،،،،، یہ لکھرام کی چھری سے مارے جانے کی پیشگوئی کہاں ہے ؟؟؟
    • Roohani Khezaen Vol-5, page-649
      Farsi Nazm mein.
    • Salman Ahmad
      محترم ! یہ نظم تو 1886 کی ہے جو اشتہار کے ساتھ شائع ہوئی تھی
      اور یہ اشتہار تو ہر گز کسی پیشگوئی پر مبنی نہیں تھا ۔
      20فروری 1893 والا اشتہار پیشگوئی پر مبنی تھا لیکن اس میں چھری سے مرنے والی کوئی پیشگوئی موجود نہیں ۔
    • Kiyon ye ilfaaz paish goee naheen. Kiya ye ilfaaz qatel se pehle k hain ya naheen?
    • Salman Ahmad
      پہلے تو وہ الفاظ نقل کریں ۔
      دوسرا میں عرض کر چکا ہوں یہ نظم 1886 کی ہے اور اس میں کوئی پیشگوئی نہیں بلکہ پیشگوئی کرنے کے بارے میں پوچھا جا رہا ہے
      یہ دیکھیں مرزا قادیانی کے الفاظ خ ج5 ص 650
      اندرمن مراد آبادی اور لیکھرام پشاوری کو اس بات کی دعوت کی تھی کہ اگر وہ خواہشمند ہوں تو ان کی قضا و قدر کی نسبت بعض پیشگوئیاں شائع کی جائیں۔
      Yeqeenan aap jamaet kee website www.alislam.org jaante hon ge weha orignal book mojood hai. Ilfaz wehha se aap daikh sekte hain.

    • Secondly, soora Fateha kee last asyet mein aik doa seekhaee gaee hai. Yani "ae khuda hemain Yehood-o-nisara k neqsh-e-qadem pe chelne se bechaeeyo".
      Es do mein ye paish goee bhee shamil hai keh aik din muselmano mein se baez aise bhee paida hon ge jo yehood-o-nisara k neqsh-e-qadem pe chelne waale hon ge. Aur aaj ye paish goee hemare samne pori ho chukee hai.
      Hairat hai keh Jo paish goee k ilfaz thai wo poore ho chuke. Aur ajj aap oos pe aitraz ker rehe hain aur kehte hain k ye ilfaz paish goee mein naheen belkeh oos se pehle k hain.
      Salman Ahmad
    • جناب میری بات آپ سے ہو رہی اس لئے جواب آپ عنایت فرمائیں ۔ ایک تو وہ الفاظ مجھے بتائیں جس سے آپ استدلال کر رہے ہیں پھر دوسرا یہ ثابت فرما دیں کہ یہ واقعی پیشگوئی کی تھی اور اس کا مخاطب صرف لیکھرام تھا
      اور اس کا جواب آپ دے ہی نہیں رہے
    • Salman Ahmad
      دوسرا میں عرض کر چکا ہوں یہ نظم 1886 کی ہے اور اس میں کوئی پیشگوئی نہیں بلکہ پیشگوئی کرنے کے بارے میں پوچھا جا رہا ہے
      یہ دیکھیں مرزا قادیانی کے الفاظ خ ج5 ص 650
      اندرمن مراد آبادی اور لیکھرام پشاوری کو اس بات کی دعوت کی تھی کہ اگر وہ خواہشمند ہوں تو ان کی قضا و قدر کی نسبت بعض پیشگوئیاں شائع کی جائیں۔
    • Main ne aap ko jo Page-649 ka reference deeya hai kiya wo page aap k leeye nikalna mumkin naheen?
      Salman Ahmad
    • اس صفحے پر تو کافی سارے اشعار ہیں اور ہیں بھی فارسی میں یہ تو آپ کا کام ہے کہ بتائیں کہ کن اشعار سے آپ کا استدلال ہے ؟
      بلکہ اس سے پہلے یہ ثابت تو کریں کہ یہ کوئی پیشگوئی ہے اور ہے بھی لیکھرام کے بارے میں ،
      یہ نظم 1886 کی ہے اور اس میں کوئی پیشگوئی نہیں بلکہ پیشگوئی کرنے کے بارے میں پوچھا جا رہا ہے یہ دیکھیں مرزا قادیانی کے الفاظ خ ج5 ص 650 اندرمن مراد آبادی اور لیکھرام پشاوری کو اس بات کی دعوت کی تھی کہ اگر وہ خواہشمند ہوں تو ان کی قضا و قدر کی نسبت بعض پیشگوئیاں شائع کی جائیں۔
    • Istedlaal naheen belkeh wehan "Taigh" ka lafez mojood hai jis ka metlab hota hai "Taiz dhaar waala aaela" jis teha churi, khenjer ya blade hote hai.
    • Salman Ahmad
      میرے بھائی آپ نے بس تیغ لفظ دیکھ لیا اور اسے ہی پیشگوئی سمجھ لیا ؟ آپ میری پوری بات کا جواب دیں
      دعوت کی تھی کہ اگر وہ خواہشمند ہوں تو
      ں تو ان کی قضا و قدر کی نسبت بعض پیشگوئیاں شائع کی جائیں۔
    • Wehan oos ko tenbeeh kee gaee hai teagh se bechne kee.
      Salman Ahmad
    • 1886 کے اشتہار میں تو ابھی پیشگوئی کی دعوت دی جا رہی ہے میرے بھائی
      لیکھرام کے بارے میں پیشگوئی تو 1893 میں شائع ہوئی
      اور آپ نے خود تسلیم فرما لیا کہ وہ تنبیہ تھی تنبیہ اور پراپر پیشگوئی کیا ایک ہی چیز ہوتی ہے؟
    • 1893 mein tao last paish goee hai jis mein meaad beta dee gaee thee.
      1893 mein ye tao naheen keha keh jo baat oos k bare mein pehle kehee gaee thee wo cancle ho gaee hai.
      Main ne aap ko Soora Faateha ka reference deeya hai
      Wehan jis baat se roka giya hai wo paish goee bhee hai
    • Salman Ahmad
      ابھی ہم صرف لیکھرام کی پیشگوئی پر بات کر رہے ہیں ۔
      آپ اس کا تو جواب ہی نہیں دیتے
      دعوت کی تھی کہ اگر وہ خواہشمند ہوں تو ں تو ان کی قضا و قدر کی نسبت بعض پیشگوئیاں شائع کی جائیں۔
      یہ عبارت واضح ہے کہ اس سے پہلے کوئی پیشگوئی نہیں کی گئی تھی ۔
      اصل پیشگوئی صرف 1893 کے اشتہار والی ہے
    • Es ka metlab ye hooa keh aap paish goee kee heqeeqat jo aap ne sochee hai oos k mutsbiq es paish goee ko perekhna chahte hain na keh Quran ne paish goee kee jo heqeeqat beyan fermaee hai oos pe.
      Salman Ahmad
    • لیکن لیکھرام نے بڑی دلیری سے ایک کارڈ اس عاجز کی طرف روانہ کیا کہ میری نسبت جو پیشگوئی چاہو شائع کردو میری طرف سے اجازت ہے۔
    • Tao phir jo ilfaaz shaya keeye gae wo poore hooe ya naheen?
    • Salman Ahmad
      اس پر 1893 کی پیشگوئی شائع ہوئی
      اس پیشگوئی میں ایسے کوئی الفاظ نہیں تھے کہ لیکھرام چھ سال کے عرصہ میں چھری سے مارا جائے گا
      1893 کی پیشگوئی دیکھ لیں میں لگاتا ہوں یہاں
    • Salman Ahmad
      ۔ سو اس کی نسبت جب توجہ کی گئی تو اللہ جلّ شانہٗ کی طرف سے یہ الہام ہوا۔ عِجْلٌ جَسَدٌ لَہ‘ خُوَار۔ لَہ‘ نَصَبٌ وَ عَذَاب یعنی یہ صرف ایک بے جان گوسالہ ہے جس کے اندر سے ایک مکروہ آواز نکل رہی ہے۔ اور اس کیلئے انؔ گستاخیوں اور بدزبانیوں کے عوض میں سزا اور رنج اور عذاب مقدر ہے جو ضرور اس کو مل رہے گا۔ اور اس کے بعد آج جو ۲۰؍ فروری ۱۸۹۳ء روز دو شنبہ ہے اس عذاب کا وقت معلوم کرنے کیلئے توجہ کی گئی تو خداوندکریم نے مجھ پر ظاہر کیا کہ آج کی تاریخ سے جو بیس۰۲ فروری ۱۸۹۳ء ہے چھ برس کے عرصہ تک یہ شخص اپنی بدزبانیوں کی سزا میں یعنی ان بے ادبیوں کی سزا میں جو اس شخص نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے حق میں کی ہیں عذاب شدید میں مبتلا ہو جائے گا سو اب میں اس پیشگوئی کو شائع کر کے تمام مسلمانوں اور آریوں اور عیسائیوں اور دیگر فرقوں پر ظاہر کرتا ہوں کہ اگر اس شخص پر چھ۶ برس کے عرصہ میں آج کی تاریخ سے کوئی ایسا*عذاب نازل نہ ہوا جو معمولی تکلیفوں سے نرالا اور خارق عادت اور اپنے اندر الٰہی ہیبت رکھتا ہو تو سمجھو کہ میں خدا تعالیٰ کی طرف سے نہیں اور نہ اس کی روح سے میرا یہ نطق ہے اور اگر میں اس پیشگوئی میں کاذب نکلا تو ہریک سزا کے بھگتنے کے لئے میں طیار ہوں اور اس بات پر راضی ہوں کہ مجھے گلے میں رسہ ڈال کر کسی سولی پر کھینچا جائے اور باوجود میرے اس اقرار کے یہ بات بھی ظاہر ہے کہ کسی انسان کا اپنی پیشگوئی میں جھوٹا نکلنا خود تمام رسوائیوں سے بڑھ کر رسوائی ہے۔ زیادہ اس سے کیا لکھوں
    • Salman Ahmad
      (اگر اس شخص پر چھ۶ برس کے عرصہ میں آج کی تاریخ سے کوئی ایسا*عذاب نازل نہ ہوا جو معمولی تکلیفوں سے نرالا اور خارق عادت اور اپنے اندر الٰہی ہیبت رکھتا ہو تو سمجھو کہ میں خدا تعالیٰ کی طرف سے نہیں)
    • Tao kiya ye ilfaz poore hooe ya naheen
    • Salman Ahmad
      میرا سوال تو ابھی صرف یہ ہے
      خ ج 18 ص 553 پر لیکھ رام کت حوالے سے کہا اور میں نے بھی اس کی نسبت موت کی پیشگوئی کی تھی کہ چھ برس تک چھری سے مارا جائے گا۔ ،،،،،،، یہ لکھرام کی چھری سے مارے جانے کی پیشگوئی کہاں ہے ؟؟؟
      Tao kiya ye ilfaz poore hooe ya naheen
      یہ بھی پورے نہیں ہوئے لیکن اس پر بات بعد میں ہو گی
    • Salman Ahmad
      ( چھ برس تک چھری سے مارا جائے گا۔ )
      ایسی کوئی پیشگوئی مرزا قادیانی کی نہیں ہے جناب
    • Ager aap kehte hain keh ye ilfaaz (jo aap ne paish goee k copy keeye hain) bhee pore naheen hooe tao phir churi wali baat kee behes hee be-meaani ho jati hai.
      Jo ilfaz aap k kheyal mein paish goee k ilfaaz thai wo kis terha poore naheen hooe.
    • Salman Ahmad
      میں یہ کہہ رہا ہوں کہ 1893 والی پیشگوئی بھی ہوری نہیں لیکن اس پر بات بعد میں کروں گا کہ کیسے پوری نہیں ہوئی
      ابھی میرا سوال صرف اتنا ہے وہ چھ برس میں چھری سے مارے جانے پیشگوئی کہاں ہے ؟
      Jenab ager aap pehli baat naheen maante tao phir churi waali baat pe behes ker k hum time zaya kerain ge.
    • Es leeye pehle aap betain keh jo ilfaz 1893 ko shaya keeye gae wo poore hooe ya naheen. Ager naheen tao kis terha?
    • Salman Ahmad
      دیکھیں جناب یہ بالکل دو الگ چیزیں ہیں 1893والی پیشگوئی میں تو آپ خود بھی تسلیم کریں گے کہ چھری سے مارے جانے والی کوئی بات ہی نہیں ۔
      اب یہ 1893 والی پیشگوئی کیسے پوری نہیں ہوئی یہ ایک الگ بحث ہے اور میں انشا،اللہ ضرور اس پر بھی بات کروں گا
    • Ye aleg behes naheen hai. Ager aap es ko aleg behes samejhte hain tao phir aap ka meqsad sirf aur sirf aitraz kerna hai.
      Aap jewab dain keh 1893 k ilfaz kis terha poore naheen hooe?
    • Salman Ahmad
      آپ مجھے بتا دیں کہ یہ الگ بحث نہیں تو میں جواب دے دیتا ہوں
      یعنی کیسے الگ بحث نہیں
    • Ager 1893 k ilfaz mein churi se naheen belkeh kisi aur cheez se merne ka ziker hai tao aap beta dain
      Ager aap es baat ka jewab naheen dain ge "keh 1893 k ilfaz kis terha poore naheen hooe" tao es topic pe baat aage naheen ho seke gee.
    • Salman Ahmad
      اگر آپ سمھجتے ہیں کہ 1893 کی پیشگوئی میں چھری سے مارے جانے کے الفاظ ہیں تو آپ وہ الفاظ پیش فرما دیں ۔
      میرا سوال تو فقط اتنا ہی ہے
      وہ چھ برس میں چھری سے مارے جانے والی پیشگوئی کہاں ہے ؟
    • Main ne tao ye keha hee naheen keh 1893 mein churi wali baat kehee gaee.
      Main tao aap se ye poocha reha hoon keh churi wali baat pe behes kerne se pehle ye betain k jo bhee ilfaz 1893 mein shaya keeye gae wo poore hooe ya nahee. Ager naheen tao kis terha.
    • Salman Ahmad
      محترم سائل تو میں ہوں آپ تو مجیب ہیں
      جب آپ سائل بنیں گے پھر میں جواب بھی ضرور دوں گا انشا،اللہ
    • Ager aik insaan khuda teaala kee hesti ka tao inkaar ker dai aur behes ker Hazrat Muhammad Mustefa SAWW Rasool tai ya naheen tao aap oos se kiya behes kerian ge?
    • Salman Ahmad
      دیکھیں میرے بھائی میں نے کوئی فلسفیانہ سوال تو کیا نہیں
      میں نے فقط مرزا قادیانی کی ایک پیشگوئی کے بارے میں پوچھا ہے
    • Main ne aap ko bunyadi baat beta dee hai. Ager aap es topic pe baat continue rekhna chahte hain tao pehle meri baat ka jewab dai dain. Werna es topic pe baat naheen ho seke gee.
    • Salman Ahmad
      آپ تو مائنڈ ہی کر گئے ۔
      یہ تو کوئی بات نہیں کہ کوئی آپ سے ایک بات پوچھے تو آپ اسے کہیں کہ نہیں پہلے میری اس بات کا جواب دو تو پھر میں جواب دوں گا ۔ آپ سے اب کل بات ہو گی انشا،اللہ
    • Jenab hum mazhab pe baat ker rehe hain aur main ye baatain sirf aur sirf Quran k oosool pe ker sekta hoon
      Quran k mutabiq hemain pehle point of agreement final kerne chaheeyeeain phir points of disagreement pe baat ho sekti hai
      Es leeye ager aap wo baat jo pehle aati hai aur aap ne oos pe aitraz bhee naheen kiya oos pe agree ker lain tao phir agli baat bhee ker lsin ge.
    • Salman Ahmad
      سچی بات ہے مجھے آپ کے لاسٹ کامنٹ کی کوئی سمجھ نہیں آئی ۔
      میرے ایک چھوٹے سے سوال پر اتنی لمبی بات ؟؟؟
      اگر میرے سوال کا جواب آپ کے پاس نہیں تو پھر ہم 1893 والی پیشگوئی پر بات کر لیتے ہیں
    • Aap kee merzi, aap jo chahain semjhain. Mager es topic ko continue kerne k leeye aap pehle ye beta dain keh 1893 kee paish goee k ilfaz jo aap maante hain wo poore hooe ya naheen? Ager naheen tao kis terha?
    • Salman Ahmad
      چلیں اس پر کل بات کروں گا اب اجازت چاہوں گا
    • Salman Ahmad
      1893 کی پیشگوئی میں تین باتیں تھیں کہ آج کی تاریخ سے جو 20 فروری 1893 ہے چھہ برس کے عرصہ میں
      1: آج کی تاریخ سے کوئی ایسا عذاب نازل نہ ہوا جو معمولی تکلیفوں سے نرالا
      2: اور خارق عادت
      3: اور اپنے اندر الٰہی ہیبت رکھتا ہو
      اور خارق عادت کی تعریف تو مرزا قادیانی خود فرما چکے ہیں
      جس امر کی کوئی نظیر نہ پائی جائے اسی کو دوسرے لفظوں میں خارق عادت بھی کہتے ہیں ۔ (خ ص 67 ج 2)
      خارق عادت اسی کو تو کہتے ہیں جس کی نظیر دنیا میں نہ پائی جائے ۔ خ 22 ص 204
      ظاہر ہے کہ کسی امر کی نظیر پیدا ہونے سے وہ امر بینظیر نہیں کہلا سکتا ۔ خ 17 ص 203
      جبکہ ہوا کیا لیکھرام چھری سے قتل ہو گیا ۔
      کیا چھری سے قتل ہونا وہ تینوں شرطیں پوری کرتا ہے جو اوپر بیان ہوئی ہیں ؟؟؟؟
      ہر گز نہیں
      چھری سے قتل ہر گز خارق عادت نہیں ہے اور باقی دو شرطیں بھی اس میں نہیں ۔
      اصل میں تو اس پیشگوئی میں لیکھرام کے مرنے کی کوئی بات ہی نہیں اسے مرنا نہیں تھا بلکہ اس پر کوئی عزاب شدید آنا تھا فقط
      اس عذاب شدید کی تشریح بھی مرزا جی کر چکے ہیں جس میں چھری کی کوئی گنجائش نہیں نکلتی ۔ ملاحظہ کریں
      روحانی خزائن جلد 12 ص 15،14
      میں اس بات کا خود اقراری ہوں اور اب پھر اقرار کرتا ہوں کہ اگر جیسا کہ معترضوں نے خیال فرمایا ہے پیشگوئی کا ماحصل آخرکار یہی نکلا کہ کوئی معمولی تپ آیا یا معمولی طور پر کوئی درد ہوا یا ہیضہ ہوا اور پھر اصلی حالت صحت کی قائم ہوگئی تو وہ پیشگوئی متصور نہیں ہوگی اور بلاشبہ ایک مکر اور فریب ہوگا۔ کیونکہ ایسی بیماریوں سے تو کوئی بھی خالی نہیں۔ ہم سب کبھی نہ کبھی بیمار ہو جاتے ہیں۔ پس اس صورت میں میں بلاشبہ اس سزاکے لائق ٹھہروں گا جس کا ذکر میں نے کیا ہے۔ لیکن اگر پیشگوئی کا ظہور اس طور سے ہوا کہ جس میں قہر الٰہی کے نشان صاف صاف اور کھلے طور پر دکھائی دیں تو پھر سمجھو کہ خدا تعالیٰ کی طرف سے ہے ۔
      Jenab aap ka es mein pehla aitraz "Khareq-e-Aadat" pe hai.
    • Ager aap k kheyal mein Churi se qatel kiya jana, aur churi bhee gredan pe naheen belkeh pait mein maari gaee jis se wo oos waqt naheen belkeh terep terep k next day apni maot ko dakh k mera. Mere leeye tao ye koee normal maot na thee.
      Ager aap es ko "Khareq-e-Aadet" naheen maante tao phir mujhai ye baat semjha dain keh aap k kheyal mein kon see maot ko aap "Khareq-e-Aadet" kehte hain?
    • Salman Ahmad
      جناب خرق عادت کی تعریف میں مرزا جی کے حوالے سے ہی بیان کر دی تھی
      میں نےاپنی بات ترتیب سے نکات کی صورت میں پیش کی ہے اس لئے اسی ترتیب سے جواب دیں ۔
      پیٹ میں چھری سے مرنے کے واقعات اس پیشگوئی سے پہلے بھی ہوتے رہے ہیں یہ کوئی ایسا واقعہ نہیں جسے ہم خارق عادت کہہ سکیں
      Main ne aap se ooper keha keh ager main ye maan loon keh Churi se merna Khareq-e-Aadet naheen tao aap betain keh kon see maot ko aap Mirza Saheb kee definition k mutabiq Khareq-e-Aadet kehain ge?
    • Pehle Khaareq-e-Aadet ko discuss ker lain phir agla point discuss kerain ge.
    • Salman Ahmad
      دیکھیں جناب خارق عادت کی تعریف تو خود مرزا جی کر دی ہے
      جس امر کی کوئی نظیر نہ پائی جائے اسی کو دوسرے لفظوں میں خارق عادت بھی کہتے ہیں ۔ (خ ص 67 ج 2)
      خارق عادت اسی کو تو کہتے ہیں جس کی نظیر دنیا میں نہ پائی جائے ۔ خ 22 ص 204
      ظاہر ہے کہ کسی امر کی نظیر پیدا ہونے سے وہ امر بینظیر نہیں کہلا سکتا ۔ خ 17 ص 203
      یہ آسان الفاظ ہیں
      اب یہ تو آپ کو ثابت کرنا ہے کہ اس پیشگوئی سے قبل کبھی کوئی انسان چھری سے قتل نہیں ہوا ۔ اور لیکھرام کا واقعہ بے نظیر ہے ۔
      اصل میں تو اس پیشگوئی میں لیکھرام کے مرنے کی کوئی بات ہی نہیں اسے مرنا نہیں تھا بلکہ اس پر کوئی عزاب شدید آنا تھا فقط
      اس عذاب شدید کی تشریح بھی مرزا جی کر چکے ہیں جس میں چھری کی کوئی گنجائش نہیں نکلتی ۔ ملاحظہ کریں
      روحانی خزائن جلد 12 ص 15،14
      میں اس بات کا خود اقراری ہوں اور اب پھر اقرار کرتا ہوں کہ اگر جیسا کہ معترضوں نے خیال فرمایا ہے پیشگوئی کا ماحصل آخرکار یہی نکلا کہ کوئی معمولی تپ آیا یا معمولی طور پر کوئی درد ہوا یا ہیضہ ہوا اور پھر اصلی حالت صحت کی قائم ہوگئی تو وہ پیشگوئی متصور نہیں ہوگی اور بلاشبہ ایک مکر اور فریب ہوگا۔ کیونکہ ایسی بیماریوں سے تو کوئی بھی خالی نہیں۔ ہم سب کبھی نہ کبھی بیمار ہو جاتے ہیں۔ پس اس صورت میں میں بلاشبہ اس سزاکے لائق ٹھہروں گا جس کا ذکر میں نے کیا ہے۔ لیکن اگر پیشگوئی کا ظہور اس طور سے ہوا کہ جس میں قہر الٰہی کے نشان صاف صاف اور کھلے طور پر دکھائی دیں تو پھر سمجھو کہ خدا تعالیٰ کی طرف سے ہے ۔
      Jenab Mirza Saheb kee definition main jaanta hoon aur aap se zeyaada samejhta hoon.
    • Aap es definition se jo samajhte hain oos k mutabiq kisi bhee qisam kee maot ko "Khareq-e-Aadet" sabet naheen ker sekte. Ye mera challange hai aap ko.
      Es keeye qasoor aap kee samejh ka hai difinition ka naheen.
    • Salman Ahmad
      خارق عادت کی تعریف مرزا جی کریں اور قصور وار ہم ٹھریں ۔
    • Qasoor ka naheen aap kee samajh ka hai.
      Mera challange hai aap ko jewab dain.
      Qasoor definition ka naheen aap kee samajh ka hai.
      Mera challange hai aap ko jewab dain.
      Aap definition se jo matlab nikalte hain oos definition k mutabiq koee maot Khareq-e-Aadet sabet ker dain.
      Its challenge for you.
    • Salman Ahmad
      Aap es definition se jo samajhte hain oos k mutabiq kisi bhee qisam kee maot ko "Khareq-e-Aadet" sabet naheen ker sekte.
      یہی تو میں کہہ رہا ہوں آپ نے میرے کامنٹ کو صحیح پڑھا ہی نہیں
      میں نے کہا تھا
      (اصل میں تو اس پیشگوئی میں لیکھرام کے مرنے کی کوئی بات ہی نہیں اسے مرنا نہیں تھا بلکہ اس پر کوئی عزاب شدید آنا تھا فقط )
      اور میں نے مزید یہ بھی لکھا تھا مرزا جی کے حوالے سے
      (اگر جیسا کہ معترضوں نے خیال فرمایا ہے پیشگوئی کا ماحصل آخرکار یہی نکلا کہ کوئی معمولی تپ آیا یا معمولی طور پر کوئی درد ہوا یا ہیضہ ہوا اور پھر اصلی حالت صحت کی قائم ہوگئی تو وہ پیشگوئی متصور نہیں ہوگی اور بلاشبہ ایک مکر اور فریب ہوگا۔
      اور یہ تو آپ خود مان رہے ہیں کہ کسی موت کو بھی خارق عادت ثابت نہیں کیا جا سکتا
      تو اس سے تو یہ خود بخود ثابت ہو گیا کہ لیکھرام کی چھری سے موت خارق عادت نہیں تھی
      اور جب خارق عادت نہیں تھی تو پیسگوئی پوری نہ ہوئی
    • Main ne tao ye hergiz naheen keha keh kisi maot ko khareq-e-aadet sabet naheen kiya ja sekta.
      Aap es definition se jo metlab laite hain wo aap ne apni marzi ka benaya hooa hai.
      Aap ne ye maana hai keh aap khareq-e-aadet se jo metlab samejhte hain oos k mutabiq koee maot bhee Khareq-e-aadet naheen ho sekti. Tao es ka matlab tao saaf ye hooa k aap kee samajh ka qasoor ka.
    • Werna tao ya maanena perthe ga keh jis ne definition kee oos ko hee matlab ka ilm na tha
    • Salman Ahmad
      سادہ سی بات کو آپ الجھا رہے ہیں
      یہ ہے خارق عادت کی تعریف مرزا جی کے قلم سے
      جس امر کی کوئی نظیر نہ پائی جائے اسی کو دوسرے لفظوں میں خارق عادت بھی کہتے ہیں ۔ (خ ص 67 ج 2) خارق عادت اسی کو تو کہتے ہیں جس کی نظیر دنیا میں نہ پائی جائے ۔ خ 22 ص 204 ظاہر ہے کہ کسی امر کی نظیر پیدا ہونے سے وہ امر بینظیر نہیں کہلا سکتا ۔ خ 17 ص 203
      اب اس تعریف کی رو سے آپ ثابت کریں کہ چھری سے موت خارق عادت ہے ؟؟؟
      اب کل ملاقات کل ہوگی
    • Aap Mirza saheb kee definition pe baat naheen ker rehe belkeh oos definition se jo matlab apne demaagh se nikal rehe hain oos pe behe ker rehe hain
    • Ager aap ka yehee aitraz hai tao es aitraz ka jewab main dai chuka. Aur ab aap fazool behes ker rehe hain. Jis mein kisi qisem kee logic naheen.
      Ab pehle aap mere sewal ka jewaab dain keh kiya aap Hazrat Muhammad Mustefa SAWW ko secha nabi maante hain ya naheen. Ager maante hain tao phir sabet kerain.
    • Salman Ahmad
      (Aap Mirza saheb kee definition pe baat naheen ker rehe belkeh oos definition se jo matlab apne demaagh se nikal rehe hain oos pe behe ker rehe hain) جناب میں نے مرزا قادیانی کی تعریف سے کوئی مطلب نہیں نکالا میں نے تو صرف اور صرف مرزا صاحب کی اپنی بیان کردہ خارق عادت کی تعریف بغیر کسی تبصرے کے بیان کی ہے ۔
      اور آپ سے پوچھا ہے
      یہ ہے خارق عادت کی تعریف مرزا جی کے قلم سے جس امر کی کوئی نظیر نہ پائی جائے اسی کو دوسرے لفظوں میں خارق عادت بھی کہتے ہیں ۔ (خ ص 67 ج 2) خارق عادت اسی کو تو کہتے ہیں جس کی نظیر دنیا میں نہ پائی جائے ۔ خ 22 ص 204 ظاہر ہے کہ کسی امر کی نظیر پیدا ہونے سے وہ امر بینظیر نہیں کہلا سکتا ۔ خ 17 ص 203
      اب اس تعریف کی رو سے آپ ثابت کریں کہ چھری سے موت خارق عادت ہے ؟؟؟
      اب اتنی سادہ سی بات آپ کو سمجھ نہیں رہی؟؟؟؟
      پھر دوسرا نکتہ یہ ہے کہ مرزا صاحب خود ہی عزاب شدید کی تشریح کر چکے ہیں وہ از قسم
      کسی تپ ، درد یا ہیضہ یا اسی قسم کے کسی مہلک مرض کی نہیات بھیانک صورت میں ہو گا
      (Ab pehle aap mere sewal ka jewaab dain keh kiya aap Hazrat Muhammad Mustefa SAWW ko secha nabi maante hain ya naheen. Ager maante hain tao phir sabet kerain)
      یہ بالکل ہی الگ ٹاپک ہے اس پر یہاں بات کرنے کی کوئی وجہ نہیں بنتی
    • Main ne aap se keha tha keh aap fazool behes ker rehe hain. Main ne aap ko jewab dai deeya hai ager aap naheen maanena chahte tao aap kee marzi. Main ne aap ko zaberdasti tao naheen keha keh zaroor manain.
      Ager sooraj nikla ho aur dhoop ho, phir bhee koee kehe k raat hai tao phir saboot daina oos ka kaam hai jo din ko naheen maanta.
      Ager aap ye kehte hain keh Khareq-e-Aadet kee jo definition Mirza saheb ne kee oos k mutabiq koee maot Khareq-e-Aadat ho hee naheen sekti tao der-Asel aap ka aitraz paish goee pe naheen belkeh definition pe jata hai. Pash goee pai tao koee aitraz benta hee naheen.
      Es leeye aap apni fazool soch se mujhai naheen belkeh apne aap ko dhoka dai rehe hain.
      Aur jis Qisem kee aap kee soch hai es soch k sath aap Mirza saheb ko hee naheen belkeh temam inbeeya ko jhoota sabet ker rehe hain. Aur mujhai aap kee es soch pe sirf teres hee aata hai.
      Eessee leeye main ne aap se poocha tha keh aap ager Hazrat Muhammad Mustefa SAWW ko secha nabi maante hain tao un kee sechaee ka saboot dain. Es soch k sath aap wo bhee naheen dai sekain ge.
    • Salman Ahmad
      میرے بھائی کوئی پیشگوئی تو جب پوری ہو گی جب وہ پیشگوئی ان شرائط کے ساتھ پوری ہوگی جو پیشگوئی کرنے والے نے خود بیان کی ہیں
      اگر وہ شرائط پوری نہیں ہوئیں تو کوئی عقل مند کیسے اس بات کو قبول کر سکتا کہ پیشگوئی پوری ہو گئی ۔
      میرا اصل سوال تو یہ تھا
      خ ج 18 ص 553 پر لیکھ رام کت حوالے سے کہا اور میں نے بھی اس کی نسبت موت کی پیشگوئی کی تھی کہ چھ برس تک چھری سے مارا جائے گا۔ ،،،،،،، یہ لکھرام کی چھری سے مارے جانے کی پیشگوئی کہاں ہے ؟؟؟
      لیکن اس کا تو آپ کوئی جواب نہیں دے سکے
      پھر آپ نے اصرار کیا کہ پہلے 1893 والی پیشگوئی پر بات کریں تو اس پر بھی آپ ابھی تک کوئی قابل اطمینان جواب نہیں دے سکے
      حالانکہ میں نے یہ بھی عرض کر دیا تھا کہ
      اصل میں تو اس پیشگوئی میں لیکھرام کے مرنے کی کوئی بات ہی نہیں اسے مرنا نہیں تھا بلکہ اس پر کوئی عزاب شدید آنا تھا فقط
      ساتھ ہی میں نے یہ بیان کیا تھا کہ مرزا صاحب خود ہی عزاب شدید کی تشریح کر چکے ہیں کہ وہ از قسم
      کسی تپ ، درد یا ہیضہ یا اسی قسم کے کسی مہلک مرض کی نہیات
      بھیانک صورت میں ہو گا ۔
      اور یہ بات کہ اس پیشگوئی میں لیکھرام کے مرنے کی کوئی بات ہی نہیں اسے مرنا نہیں تھا بلکہ اس پر کوئی عزاب شدید آنا تھا فقط کی تائید مرزاصاحب کے بیان کردہ اس معاہدے سے بھی ہوتی ہے جو خ جلد 12 ص 117 پر ہے کہ
      پھر بعد اس کے اس طول طویل معاہدہ کا خلاصہ یہ ہے کہ اگر کوئی پیشگوئی لیکھرام کو بتلائی جائے اور وہ سچی نہ ہو تو وہ ہندو مذہب کی سچائی کی دلیل ہوگی اور فریق پیشگوئی کرنے والے پر لازم ہوگا کہ آریہ مذہب کو اختیار کرے یا 3تین سو ساٹھ روپیہ لیکھرام کو دیدے جو پہلے سے شرمپت ساکن قادیان کی دوکان پر جمع کرا دینا ہوگا۔ اور اگر پیشگوئی کرنے والا سچا نکلے تو اسلام کی سچائی کی یہ دلیل ہوگی اور پنڈت لیکھرام پر واجب ہوگا کہ مذہب اسلام قبول کرے۔
      لیکن پھر بھی اگر کسی کو اصرار ہو کہ نہیں بھی نہیں 1893 کی پیشگوئی لیکھرام کی موت ہی کی پیشگوئی تھی تو پھر اس پر لازم ہے کہ وہ ثابت کرے کہ لیکھرام کی موت ان شرائط کے تحت ہوئی جو مرزا صاحب بیان کیں یعنی
      1893 کی پیشگوئی میں تین باتیں تھیں کہ آج کی تاریخ سے جو 20 فروری 1893 ہے چھہ برس کے عرصہ میں 1: آج کی تاریخ سے کوئی ایسا عذاب نازل نہ ہوا جو معمولی تکلیفوں سے نرالا 2: اور خارق عادت 3: اور اپنے اندر الٰہی ہیبت رکھتا ہو
    • Jenaab meri aap se dekhewaast hai k kam az kam jhoot bolna tao chorth dain. Aap ne keha keh "Main koee jewab naheen dai seka". Halankeh main ne jewab deeya hai aur hemari discussion essee pe ho rehee hai. Aap ye tao keh sektai hain k jo jewab main ne deeya wo aap ko pasend naheen aae ya aap ko samajh naheen aae ya aap mere jewab ko naheen maante. Mager ye kehna k "main ne koee jewab hee naheen deeya" seraser jhoot hai.
      Secondly Hazrat Muhammad Mustefa SAWW k baare mein be-shumaar paish goeeyan theen. Mager Abu Jehel jo apne waqt ka aqelman tereen insaan semjha jata tha mager oos ko bhee wo paish goeeyan samajh naheen aaeen. Jabkeh Syedna Hazrat Bilal RA jo aik hubshi ghulam thai un ko wo temaam semajh aa gaeen.
      Hazrat Mirza Ghulam Ahmad Qadiani AS k nishanaat aur paish goeeyon ko maanene waale log bhee es waqt Croron kee taedaad main hain mager aap jaan boojh ker sirf aitraz dhondtai rehain ge tao aap ko bhee kebhee samejh naheen aae gee.
      Es leeye aap bunyadi baat ko maanain keh aap Khareq-e-Aadet kee definition (jo Mirza saheb ne kee hai) k mutabiq kisi bhee maot ko Khareq-e-Aadet naheen maante aur na hee Kisi azaab ko (jis kee weja se maot naa bhee aae) Khaareq-e-Aadet naheen maante.
      Aisee soorat mein tao main es paish goee kee jo bhee wezaahet paish ker doon aap ne naheen maanena.
      Tao es leeye main ne keha tha keh aap fazool kee behes ker k time zaya ker rehe hain.
    • Aik baat jis pe ab aap kaafi zoor dai rehe hain keh "paish goee mein merne kee koee baat naheen sirf ezaab aana tha"
      Tao es silsile mein aap zera ye bhee beta dain keh Quran mein jo kaee aqwaam pe azaab aane ka ziker hai (merne ka ziker naheen), kiya aap oos se ye maante hain keh un pe azaab tao aaya mager wo mere naheen?
    • Salman Ahmad
      "main ne koee jewab hee میں نے ہی کا لفظ استعمال ہی نہیں کیا جناب
      اور میرا کہنے کا مقصد یہی تھا کہ آپ یہ پیشگوئی نہیں دکھا سکے
      samejh naheen aae gee
      یہ کوئی سائنس کا انتہائی مشکل مضمون نہیں جناب جسے سمجھنا مشکل ہو
      باقی عذاب کے حوالے سے میں نے خود مرزا صاحب کی تحریر پیش کر دی تھی اس پر آپ نے غالباً غور نہیں کیا ۔
      قرآن میں بھی ہر ایک عذاب کا نتیجہ موت نہیں ہوا
    • Aap "Hee" nikaal k perth lain, tab bhee aap kee bast jhoot hai.
      Main bhee yehee keh reha hoon keh Hazrat Bilal RA jaise hubshi ghulam tao samejh sekte hain mager Abu Jehel jaisa aqelmand naheen samejh sekta.
      You r just confirming my logic here.
      Quran mein beyan shuda azaab ka zeyada ter neteeja maot tha ye naheen?
      Aap ko tao ye bhee samejh naheen aa rehee k aitraz kiya kiya jaae.
      Ager aap k kheyal mein Laikhraam kee paish goee ya koee aik bhee paish goee jhooti thee tao aap ye betain keh un paish goeeyon k jhoota hone kee weja se kitne logon ne (jinhon ne in nishanon ko apni aankhon se daikha) Mirza saheb kee bait kerne k baed un ka inkaar kiya.
      Ager aap aise 10 log bhee sabet ker dain (jinhon ne paish goee ghelat sabet hone kee weja se Mirza saheb ko chora) tao main aap kee baat maan loon ga.

    • Like Like x 1
  2. ‏ ستمبر 16, 2014 #2
    طاہر

    طاہر رکن ختم نبوت فورم

    Atham ki 15 mahiny wale peshgoi ky baad kia hoa

    Ktny qadani esaii hoy??

    Kia koi muraba bata sakta hy ya ruhani khazaini ka hawala doon to bataoo gy
    • Like Like x 1

اس صفحے کی تشہیر