1. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  2. ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ

    تحفظ ناموس رسالتﷺ و ختم نبوت پر دنیا کی مایہ ناز کتب پرٹائپنگ ، سکینگ ، پیسٹنگ کا کام جاری ہے۔آپ بھی اس علمی کام میں حصہ لیں

    ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ
  3. ہمارا وٹس ایپ نمبر whatsapp no +923247448814
  4. [IMG]
  5. ختم نبوت فورم کا اولین مقصد امہ مسلم میں قادیانیت کے بارے بیداری شعور کرنا ہے ۔ اسی مقصد کے حصول کے لیے فورم پر علمی و تحقیقی پراجیکٹس پر کام جاری ہے جس میں ہمیں آپ کے علمی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ آئیے آپ بھی علمی خدمت میں اپنا حصہ ڈالیں ۔ قادیانی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد قادیانی کتب پراجیکٹ مرزا غلام قادیانی کی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ تمام پراجیکٹس پر کام کرنے کی ٹرینگ یہاں سے لیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ کا طریق کار

مرزا غلام احمد قادیانی کی عیاری

حمزہ نے 'متفرقات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ جنوری 6, 2017

  1. ‏ جنوری 6, 2017 #1
    حمزہ

    حمزہ رکن عملہ پراجیکٹ ممبر رکن ختم نبوت فورم

    مرزا غلام قادیانی نے آتھم سے مباحثے کہ بعد اسکے مرنے کی 15 مہینے کے اندر پیشگوئی کی اور رجوع شرط رکھی، نہ آتھم نے رجوع کی نہ وہ پندرہ مہینے میں مرا، مرزا جی نے کہا کہ اس نے رجوع کر لی ہے تبھی نہیں مرا، آتھم نے باقاعدہ خط لکھ کر ایک اخبار میں شائع کیا کہ میں نے کوئی رجوع نہیں، مرزا جی کہنے لگے کہ آتھم نے اگر رجوع نہیں کی تو اس بات پر قسم آٹھائے، آتھم نے کہہ دیا کہ میرے مذہب میں قسم اٹھانا منع ہے۔ مرزا قادیانی نے اس پر انعامی اشتہار دینا شروع کر دیئے کہ مگر آتھم نے بوجہ رکاوٹ مذہب قسم نہ اٹھائی۔
    اب سنیں ایک اور پیشگوئی کا انجام
    مرزا قادیانی نے محترمہ محمدی بیگم کے خاوند جناب سلطان محمد کے متعلق یہ پیشگوئی جاری کر رکھی تھی کہ وہ محترمہ محمدی بیگم سے نکاح کی صورت میں عرصہ نکاح سے اڑھائی سال کے درمیان مر جائیں گے، مگر منظور خدا وہ اچھے خاصے رہے تو مرزا قادیانی نے پھر اپنا الہامی ڈھکوسلہ دیا کہ وہ بھی ڈر گئے تھے، مولانا محمد حسین بٹالوی نے اسکی تردید میں جناب سلطان محمد کے الفاظ اشاعۃ السنۃ میں شائع کر دیے۔ مگر مرزا جی کو ہمت نہیں ہوئی کہ اس پر سلطان محمد سے قسم کا مطالبہ کرتے اور جیسے آتھم سے قسم کے مطالبے کے ساتھ انعامی اشتہارات دیتے تھے ویسا کوئی اشتہار دیتے کیونکہ مرزا جی کو پتہ تھا کہ مذہب اسلام ہمیں مطلقاً قسم کھانے سے منع نہیں کرتا اس لیے سلطان محمد نے قسم بھی کھا لینی ہے اور انکا مقصد زندگی پیسہ بھی ہاتھ سے نکل جانا ہے۔ اور وہ اسکی موت کو تقدیر مبرم کہتے کہتے مرے اور اپنے کاذب ہونے کا ایک اور ثبوت چھوڑ گے۔

اس صفحے کی تشہیر