1. Photo of Milford Sound in New Zealand
  2. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  3. Photo of Milford Sound in New Zealand
  4. Photo of Milford Sound in New Zealand

میری امت میں تیس جھوٹے ہوں گے جن میں سے ہر ایک نبی ہونے کا دعویٰ کریگا، جبکہ میں خاتم النبیین ہوں

مبشر شاہ نے 'جھوٹے مدعیانِ نبوت' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ نومبر 14, 2014

  1. ‏ نومبر 14, 2014 #1
    مبشر شاہ

    مبشر شاہ رکن عملہ منتظم اعلی

    میری امت میں تیس جھوٹے ہوں گے جن میں سے ہر ایک نبی ہونے کا دعویٰ کریگا، جبکہ میں خاتم النبیین ہوں


    فرمایا رسول اللہؐ نے: اللہ نے میرےآگے زمین سمیٹ دی تب مجھے اسکے سب مشرق و مغرب نظر آگئے۔ اور بیشک میری امت کی بادشاہت وہاں وہاں تک جانے والی ہے جہاں تک زمین سمیٹ کر (مجھے دکھایا گیا)۔ مجھے سرخ و سفید ہردو خزانے بخشے گئے۔ میں رب سے درخواست گو ہوا کہ وہ میری امت کو قحطِ عام سے تباہ نہ کرے، اور میری امت کو کسی بیرونی دشمن کے قابو میں نہ دے جو اسکا بیج مار دے۔ میرے رب نے فرمایا: اے محمد، بیشک جب میں فیصلہ کردوں تو وہ واپس نہیں ہوتا، میں انکو قحطِ عام سے تباہ نہ کروں گا، اور میں انکو کسی باہر کے دشمن کے قابو میں نہ دوں گا جو انکا بیج مار دے، چاہے دشمن زمین کے کونے کونے سے اکٹھے ہوکر کیوں نہ آلیں۔ یہاں تک کہ یہ خود ہی ایک دوسرے کو ہلاک کرنے اور ایک دوسرے کو غلام بنانے لگیں گے۔ ہاں مجھے اصل ڈر اپنی امت کے معاملے میں گمراہ کرنے والے ائمہ سے ہے۔ اور جب ایک بار میری امت میں تلوار نکل آئی پھر وہ قیامت تک نہ اٹھائی جائیگی۔ اور قیامت نہ آئیگی جب تک میری امت کے کچھ قبائل مشرکین کے ساتھ نہ جاملیں اور جب تک میری امت کے کچھ قبائل بت نہ پوجنے لگیں۔ اور میری امت میں تیس جھوٹے ہوں گے جن میں سے ہر ایک نبی ہونے کا دعویٰ کریگا، جبکہ میں خاتم النبیین ہوں، میرے بعد کوئی نبی نہیں۔ اور ایک گروہ میری امت میں ہمیشہ حق پر رہیگا، چھایا رہیگا، مخالفین اسکا کچھ نہ بگاڑ پائیں گے، یہاں تک کہ خدا کا اذن (قیامت) آجائے۔

    رواہ أبو داود 4252 وصححہ الألبانی
    • Like Like x 2

اس صفحے کی تشہیر