1. ختم نبوت فورم پر مہمان کو خوش آمدید ۔ فورم میں پوسٹنگ کے طریقہ کے لیے فورم کے استعمال کا طریقہ ملاحظہ فرمائیں ۔ پھر بھی اگر آپ کو فورم کے استعمال کا طریقہ نہ آئیے تو آپ فورم منتظم اعلیٰ سے رابطہ کریں اور اگر آپ کے پاس سکائیپ کی سہولت میسر ہے تو سکائیپ کال کریں ہماری سکائیپ آئی ڈی یہ ہے urduinملاحظہ فرمائیں ۔ فیس بک پر ہمارے گروپ کو ضرور جوائن کریں قادیانی مناظرہ گروپ
  2. ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ

    تحفظ ناموس رسالتﷺ و ختم نبوت پر دنیا کی مایہ ناز کتب پرٹائپنگ ، سکینگ ، پیسٹنگ کا کام جاری ہے۔آپ بھی اس علمی کام میں حصہ لیں

    ختم نبوت لائبریری پراجیکٹ
  3. ہمارا وٹس ایپ نمبر whatsapp no +923247448814
  4. [IMG]
  5. ختم نبوت فورم کا اولین مقصد امہ مسلم میں قادیانیت کے بارے بیداری شعور کرنا ہے ۔ اسی مقصد کے حصول کے لیے فورم پر علمی و تحقیقی پراجیکٹس پر کام جاری ہے جس میں ہمیں آپ کے علمی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ آئیے آپ بھی علمی خدمت میں اپنا حصہ ڈالیں ۔ قادیانی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد قادیانی کتب پراجیکٹ مرزا غلام قادیانی کی کتب کے رد کے لیے یہاں جائیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ تمام پراجیکٹس پر کام کرنے کی ٹرینگ یہاں سے لیں رد روحانی خزائن پراجیکٹ کا طریق کار

(کون اسلام کے دشمن تھے؟)

محمدابوبکرصدیق نے '1974ء قومی اسمبلی کی مکمل کاروائی' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ دسمبر 3, 2014

  1. ‏ دسمبر 3, 2014 #1
    محمدابوبکرصدیق

    محمدابوبکرصدیق ناظم پراجیکٹ ممبر

    (کون اسلام کے دشمن تھے؟)
    جناب یحییٰ بختیار: کون اسلام کے دشمن تھے؟ کون آنحضرتﷺ پر حملہ کررہے تھے، جن کی طرف یہ اشارہ ہے؟ آپ کچھ کہہ سکتے ہیں؟
    مرزا ناصر احمد: عیسائی۔
    جناب یحییٰ بختیار: عیسائی کہاں کررہے تھے؟
    مرزا ناصر احمد: ہاں۔
    جناب یحییٰ بختیار: کوئی Instance (مثال) بتادیجئے آپ کہ کسی عیسائی نے کوئی مضمون لکھا، کوئی تقریر کی، پاکستان میں، دنیا میں، جس کی طرف اشارہ ہو؟
    مرزا ناصر احمد: آپ مجھے دو گھنٹہ پڑھنے کی اجازت دیں تو میں ساری گالیاں سنادوں گا ۔ جو عیسائیوں نے نبی اکرمﷺ کو دی ہیں۱؎۔
    870جناب یحییٰ بختیار: میرا سوال ہے ناں، مرزا صاحب! کہ ۱۹۴۹ء میں مرزا صاحب نے یہ خطبہ دیا اور کہتا ہے کہ ’’دشمن گھبراتے ہیں۔ دشمن ہمارا شکار ہے۔‘‘ وہ ’’دشمن ‘‘ کون تھے؟ کیا ضرورت تھی اس کی کہ انہوں نے خطبے میں ذکر کیا؟ کیونکہ مرزا صاحب سوچ کر بات کرتے تھے۔ تو خاص پرابلم ہوگا، کوئی ایشو ہوگا۔ میں وہ پوچھنا چاہتا ہوں۔
    مرزا ناصر احمد: حضرت خلیفہ ثانی نے عیسائیوں کے خلاف ساری دنیا میں ایک مہم جاری کی ہوئی تھی اور جس وقت حضرت خلیفہ ثانی یا کوئی اور خلیفہ جماعت احمدیہ کا --- ہم ویسے ہی امام جماعت احمدیہ کہہ دیتے ہیں، لیکن آپ کہتے ہیں ’’نہیں،آپ اپنا ہی وہ لیا کریں Designation (لقب)‘‘
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، نہیں، میں نے صرف ایک سوال پوچھا ہے آپ سے…
    مرزا ناصر احمد: نہیں، نہیں، میں بتاتاہوں…
    جناب یحییٰ بختیار: کہ کوئی خاص Incident (واقعہ) بتاسکتے ہیں، کوئی Statement (بیان) عیسائیوں کا، کوئی تقریر، کوئی تحریر، اس زمانے میں، جس کے جواب میں کہہ رہے ہیں کہ…
    مرزا ناصر احمد: ہر وقت وہ ہے۔ یعنی یہ کہ یہ ۲۵؍ جولائی کو کوئی واقعہ ہوا؟
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، نہیں، دو مہینے پہلے، دو دن پہلے، دو ہفتے پہلے۔
    مرزا ناصر احمد: ساری صدی میں ہوتا رہا۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، صدی کی بات نہیں
    مرزا ناصر احمد: وہ جو پہلی صدی میں باتیں ہوئی ہیں، جواب نہیں دینا چاہئے۔
    ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    ۱؎ حد ہوگئی۔ کیا کہا؟ قادیانی توجہ فرمائیں؟ مرزا قادیانی یا کسی قادیانی کو کوئی گالی دے تو وہ گالی خوشی سے کوئی قادیانی نقل نہیں کرے گا، لیکن قادیانیوں کو دیکھیں کہ بلاتکلف ان کا سربراہ کہہ رہا ہے کہ ’’عیسائیوں نے جو آنحضرتﷺ کو گالیاں دیں وہ ساری گالیاں سنادوں گا۔‘‘ مرزا ناصر کو یہ سبق اپنے دادا ملعون قادیان مرزا قادیانی سے ملا ہے۔ مرزا قادیانی نے (کتاب البریہ ص۹۴تا۱۱۸، خزائن ج۱۳ص۱۲۰تا۱۴۶) ۲۶صفحات پرمسلسل آنحضرتﷺ کے بارہ میں صریح بیہودہ اور کمینہ گالیاں جو عیسائیوں نے دیں وہ مرزا نے جمع کردی ہیں۔ (معاذ اللہ ثم معاذ اللہ ) یہ ہے قادیانی کفر کی اندرونی کیفیت۔
    ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    جناب یحییٰ بختیار: صدی کی بات نہیں ہے۔
    Mr. Chairman: The question of Attorney- General is. (جناب چیئرمین: اٹارنی جنرل صاحب کا سوال ہے)
    جناب یحییٰ بختیار: میں یہ کہتا ہوں کہ کوئی Incident (واقعہ) بتاسکتے ہیں؟
    871Mr. Chairman: The questin of the Attorney- General is. (جناب چیئرمین: اٹارنی جنرل صاحب کا سوال ہے)
    جناب یحییٰ بختیار: یہ جنرل وہ ہورہی ہے…
    Mr. Chairman: Just a minute. The question of the Attorney- General is: the immediate cause for this, for delivery of this. The witness is requested to confine himself...
    (جناب چیئر مین: صرف ایک منٹ۔اٹارنی جنرل کا سوال ہے کہ یہ خطبہ دینے کی فوری وجہ یا سبب کیا تھا۔ گواہ سے گزارش ہے کہ وہ اپنے (جواب کو) محدود رکھے…)
    جناب یحییٰ بختیار: آپ کوئی Incident (واقعہ) بتاسکتے ہیں…
    Mr. Chairman: .... to this question only.
    (جناب چیئرمین: صرف اس سوال تک )
    جناب یحییٰ بختیار: جس کی وجہ سے انہوں نے یہ کہا؟
    Mr. Chairman: ہاںNot a general reply but regarding this specific question.
    (جناب چیئرمین: جواب عام قسم کا نہ ہو، بلکہ خاص طور پر اس سوال کا جواب ہو)
    مرزا ناصر احمد: وہ جو ہے ناں اس کا ، وہ اسی میں وہ بھی موجود ہے، لیکن قریباً پونے چودہ سو سال کا عرصہ ہوچکا دشمن آپa کی مخالفت کرنے اور آپ کے متعلق بغض اور کینہ رکھنے سے باز نہیں آتا، یہاں جو آپ کا سوال ہے، اس کا جواب یہ فقرہ ہے۔
    جناب یحییٰ بختیار: اس جگہ کوئی نہیں!
    مرزا ناصر احمد: ہزاروں ہیں۔ لیکن میں اس وقت نہیں بتاسکتا۔
    جناب یحییٰ بختیار: نہیں، اس ، اس واقعہ کے؟
    مرزا ناصر احمد: میں اس وقت نہیں بتاسکتا۱؎۔
    جناب یحییٰ بختیار: ٹھیک ہے۔
    مرزا ناصر احمد: میں کل صبح بتاؤں گا آپ کو، اگر یہی کرنا ہے۔ یعنی ایک مضمون بالکل صاف ہے…
    872جناب یحییٰ بختیار: مرزا صاحب! مضمون بالکل صاف آپ کو معلوم ہورہا ہے۔ مگر میری یہ ڈیوٹی ہے کہ… مجھے صاف نہیں معلوم ہورہا ہے…
    مرزا ناصر احمد: جی، ٹھیک ہے۔

اس صفحے کی تشہیر